121

>کالعدم ٹی ایل پی کے پرتشدد مظاہروں کی وجہ سے کھربوں روپے کے اورنج لائن ٹرین منصوبے کا شدید نقصان

ٹرین سروس کا دوبارہ آغاز مزید تعطل کا شکار ہوگیا، متاثرہ اسٹیشنز کی مرمت اور ٹریک کی ٹیسٹنگ کے بعد ٹرین دوبارہ

لاہور(االشامی نیوز)

کالعدم ٹی ایل پی کے پرتشدد مظاہروں کی وجہ سے کھربوں روپے کے اورنج لائن ٹرین منصوبے کو شدید نقصان۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں کالعدم تحریک لبیک کے پرتشدد مظاہروں کی وجہ سے ملک کے سب سے بڑے اور مہنگے ترین ماس ٹرانزٹ منصوبے کو شدید نقصان پہنچا ہے۔ پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی حکام کے مطابق لاہور اورنج لائن میٹر ٹرین کے کچھ اسٹیشنز اور ٹریک کو شدید نقصان پہنچایا گیا ہے، اسی باعث پنجاب حکومت کے فیصلے کے باوجود تاحال اورنج لائن میٹر ٹرین سروس بحال نہیں ہو سکی۔حکام کا کہنا ہے کہ کسی حادثے کے خدشے کے پیش نظر ٹرین سروس کا دوبارہ آغاز مزید تعطل کا شکار ہوا ہے۔ متاثرہ اسٹیشنز کی مرمت اور ٹریک کی دوبارہ ٹیسٹنگ کے بعد اورنج لائن ٹرین دوبارہ دوڑے گی۔

اسٹیشنز اور ٹریک کی مرمت میں کچھ دن لگ سکتے ہیں، تب تک لاہور کے شہری اورنج ٹرین کی سواری کرنے سے محروم رہیں گے۔ دوسری جانب اورنج لائن ٹرین کی 23روز سے بندش کیخلاف پنجاب اسمبلی میں قرارداد جمع کروادی گئی ۔مسلم لیگ (ن) کی رکن حناپرویز بٹ کی جانب سے جمع کرائی گئی قرار داد کے متن میں کہا گیاہے کہ اورنج لائن ٹرین گزشتہ 23روز سے بند ہے۔اورنج لائن ٹرین کی وجہ سے روزانہ ہزاروں مسافروں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔پنجاب حکومت نے پبلک ٹرانسپوٹ اور میٹرو بس کو ایس او پیز کے تحت چلانے کی اجازت دی ہے۔ قرار داد میں مطالبہ کیاگیاکہ اورنج لائن ٹرین کو بھی ایس او پیز کے تحت چلانے کی اجازت دی جائے۔ واضح رہے کہ پنجاب حکومت نے رواں ہفتے کے آغاز میں لاہور میں تمام ٹرانسپورٹ سروسز بحال کرنے کا اعلان کیا تھا۔ اس فیصلے کے تحت لاہور میں میٹرو بس اور اسپیڈو بس سروس بحال کی جا چکی ہیں، جبکہ انٹرسٹی بس سروس بھی بحال ہو چکی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں