63

جعلی مردم شماری سے ہماری نسل کشی شروع کر دی گئی،کراچی کے 70 لاکھ لوگ لاپتہ کر دیے گئے ، مصطفی کمال

کراچی (الشامی نیوز) ا،جعلی مردم شماری سے ہماری نسل کشی شروع کر دی گئی،کراچی کے 70 لاکھ لوگ لاپتہ کر دیے گئے

تفصیلات کے مطابق پاک سرزمین پارٹی کےچیئرمین مصطفیٰ کمال کا پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کراچی پاکستان کا عالمی معیار کا شہر ہے،کراچی پاکستان کی تجارت کا حب ہے،بھٹو صاحب کی حکومت نے اداروں کو پرائیوٹائز کر دیا اور  کراچی والے منہ دیکھتے رہ گئے کہ کیا ہوا،بھٹو صاحب نے کوٹہ سسٹم نافظ کر دیا،قابلیت نہیں دیکھی جائے گی بلکہ بٹوارا ہوگا،مہاجروں اور سندھیوں میں تعاصب کی دیوار کھڑی کر دی گئی،کوٹہ سسٹم سے سب سے ذیادہ نقصان سندھیوں کا ہوا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ مردم شماری میں کراچی کی آبادی کو غلط گنا گیا،سب کہہ رہے ہیں کہ کراچی کی آبادی 3 کروڑ سے کم نہیں لیکن سرکار آنکھوں میں دھول جھونک رہی ہے،3 دن پہلے پی ٹی آئی کی حکومت نے جعلی مردم شماری کو کابینہ کی منظوری دے دی،پاکستان میں کبھی بھی اعتراضی بیان سے کوئی کام نہیں رکا، جعلی مردم شماری سے بڑا ظلم کوئی اور ہو نہیں سکتا،جعلی مردم شماری سے ہماری نسل کشی شروع کر دی گئی،کراچی کے 70 لاکھ لوگ لاپتہ کر دیے گئے ایم کیو ایم نے اس پر الیکشن مہم چلائی لیکن آج وزارتوں کے چکر میں اس کمزور ترین حکومت کے سامنے گھٹنے ٹیک دیے،ایم کیو ایم کو فل الفور حکومت سے علیحدہ ہونا چاہیے،اگر ایم کیو ایم الگ ہو جائے تو یہ حکومت گھٹنوں کے بل آ جائے گی، ایم کیو ایم والے کہتے ہیں کہ عوام کے پاس جائیں گے عوام جوتے لے کر بیٹھی ہے،پہلے استعفے دو پھر عوام کے پاس جاؤ لیکن ایم کیو ایم والے کبھی بھی حکومت نہیں چھوڑیں گے کیونکہ خالد مقبول صدیقی کا نام راء کے ایجنٹ پکڑے جانے والی جے آئی ٹی میں ہے۔

مصطفی کمال نے مزید کہا کہ پہلے دن سے کہہ رہا ہوں کہ چوکیدار چوروں سے ملا ہوا ہے،کراچی کے مستقبل کے سودے ہو رہے ہیں،ایم کیو ایم کا مئیر 4 سال واویلا کرتے رہے کہ اختیارات لے لیے گئے،اپنے ہاتھوں سے پیپلز پارٹی کو اختیارات دے کر وزارتوں کے مزے لیتے رہے،ایم کیو ایم نے اختیارات پر ایک ریلی بھی نہیں نکالی،ایم کیو ایم نے ذاتی مفاد پر ہزاروں بار شہر بند کیا لیکن عوامی مفاد پر کبھی نہیں کیا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں