67

اساؤتھ پنجاب کو اس کے سائز کے مطابق نوکریوں میں کوٹہ ملے گا، یہ سیکرٹریٹ ایک شروعات ہے،ہم پوری کوشش کریں گے کے یہ ساؤتھ پنجاب ایک علیحدہ صوبہ بنے ،عمران خان

تفصیلات کے مطابق وزیر اعظمعمران خان نے ملتان میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میڈیا پرعثمان بزدار پر ہر قسم کی تنقید ہوتی ہے کہ عثمان بزدار اہیلت نہیں رکھتی وزیراعلیٰ پنجاب بننے کی، کسی نے یہ دیکھا ہی نہیں کے عثمان بزدار سے پہلے بالی ووڈ کا ایکٹر جو کبھی پانی میں بوٹ پہن کر کھڑا ہو جاتا تھا،اس کے ساتھ ملائے ان کے ڈھائی سال تو آپ کو پتہ چلے۔107

وزیر اعظم نے کہا کہ ایک آدمی جس کو اللہ سب کچھ دے چکا تھا، میں تو وہ تھا جس کو سب جانتے تھے، بڑا نام تھا، اللہ نے سب کچھ دیا تھا ، کوئی ضرورت نہیں تھی کوئی کام کرنے کی، میں صرف اس لیے آیا کے پاکستان میں ایک چھوٹا سا طبقہ لوگوں کو خون چوس رہا ہے، یہ ایک چھوٹی سی ایلیٹ تھی، اس چھوٹے طبقے کے لیے قانون کوئی اور اور دوسرے پاکستانیوں کے لیے قانون کوئی اور،باقی عوام کے لیے اردو میڈیم اور مدرسے اور اس طبقے کے لیے انگلش میڈیم،ایک چھوٹے سے طبقے کے لیے سارا پاکستان بنا ہوا ہے ایسی سوچ بنا دی تھی۔

وزیر اعظم نے تقریب میں ایک واقع کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ ایک دفعہ جب میں اور بزدار داتا صاحب کے پاس سے گزرے تھے تو فٹ پاتھ پر لوگوں سوئے ہوتے تھے، تو میں نے عثمان بزدار سے کہا کے وہ جو لوگ آپ نے دیکھے ہے میں چاہتا ہوں کےان کے لیے پناہ گاہ بنائے، عثمان بزدار نے دنوں میں پناہ گاہ بنا دی، کیونکہ ان کے دل میں غریبوں کے لیے درد تھا۔

انہوں نے کہا کہ ہیلتھ کارڈ پر بھی تنقید کی جاتی تھی کے اتنا پیسہ کہاں سے آئے گا، آج عثمان بزدار پورا زور لگا رہے ہے کے دسمبر تک پنجاب کے ہر شہری کے پاس ہیلتھ کارڈ ہوں،ان کے ہیلتھ انشورنس ہوں،جب گھر میں بیماری ہوتی ہے تو کس طرح کے بے بسی گھروں میں ہوتی ہے،ایک بیماری کے بے بسی ہوتی ہے اور دوسرا ان کے پاس پیسہ نہیں ہوتا علاج کروانے کے لیے۔

عمران خان نے کہا کہ عثمان بزدار نے پسماندہ طبقے کی مدد کی،مجھے یہ خوشی ہوئی کے آج ہم نے کسان کارڈ لانج کیا، کسان کارڈ کی پہل پنجاب نے کی کسی اور صوبے نے ایسا قدم ابھی نہیں اٹھایا،جب کسان کی مدد کریں گے تو ملک میں خوشحالی آئے گی،جب ہم پختونخوا میں آئے تو یہی لوگ کہتے رہے کے کدھر ہے پختونخوا،مجھے کہا گیا کے بھول جائے کے پختونخوا صرف ایک بار لوگوں کو موقع دیتے ہے دوبارہ نہیں دیتے،اور پھر جب الیکشن ہوئے تو ہمیں ڈبل سیٹیں ملی،جس صوبے نے سب سے تیزی سے غربت ختم کی وہ پختونخوا تھا،

ان کا کہنا تھا کہ پانچ سال بعد لوگ یاد رکھیں گے کے پنجاب کے غریب لوگوں کی کس نے مدد کی،عثمان بزدار کا علاقہ سب سے پسماندہ علاقہ ہے،اب یہ سوچ آ گئی ہے کے ہم نے تمام علاقوں کی ترقی کرنی ہے،جو علاقیں پیچھے رہ گئے ہے میری پوری کوشش ہو گی کے ہمارے کمزور اور غریب علاقے اوپر آئے،میری پہلے دن سے رائے تھی کے ساؤتھ پنجاب پیچھے رہ گیا ،میں سارے پاکستان پھیرا، پاکستان کا کوئی علاقہ نہیں جہاں میں نہیں گیا،ساؤتھ پنجاب میں نے سب سے زیادہ گرمی دیکھی، مجھے اندازہ نہیں تھا،ساؤتھ پنجاب کو اس کے سائز کے مطابق نوکریوں میں کوٹہ ملے گا، یہ سیکرٹریٹ ایک شروعات ہے،ہم پوری کوشش کریں گے کے یہ ساؤتھ پنجاب ایک علیحدہ صوبہ بنے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں