30

کورونا نے ہنستا بستا گھرانہ اجاڑ دیا، بس دو بچیاں زندہ رہیں

نئی دہلی: (الشامی نیوز آن لائن نیوز)بھارت میں کورونا نے ہنستا بستا گھرانہ اجاڑ دیا، فیملی کے 6 میں 4 افراد کورونا سے چل بسے بس دو بچیاں ہی زندہ رہ گئیں۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق ریاست اتر پردیش کے ضلع غازی آباد کی ایک سوسائٹی میں افسوسناک واقعہ پیش آیا، جہاں ایک فیملی کے 6 میں 4 افراد کورونا سے انتقال کرگئے اور فیملی میں 8 اور 6 سال کی دو کمسن بچیاں زندہ رہ گئیں۔

رپورٹ کے مطابق گھر کے سربراہ درگیش پرساد کورونا میں مبتلا ہوئے انہیں گھر پر قرنطینہ میں رکھا گیا، 27 اپریل کو وہ گھر پر ہی کورونا سے چل بسے۔

بعدازاں درگیش پرساد کی اہلیہ، ان کے بیٹے اور بہو کو گریٹر نوئیڈا کے نجی اسپتال میں داخل کرایا گیا، دوران علاج 4 مئی کو درگیش کے بیٹے اشونی کی موت ہوگئی۔

بیٹے کے انتقال کے ایک روز بعد یعنی 5 مئی کو درگیش کی اہلیہ سنتوش کماری بھی کورونا سے چل بسیں اور اس کے بعد درگیش کی بہو نرملا بھی انتقال کرگئیں۔

اس پورے خاندان میں اشونی اور نرملا کی صرف دو معصوم لڑکیاں زندہ رہ گئیں، ایک کی ہی گھر کے 4 افراد کے انتقال کے بعد علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا۔

اشونی اور نرملا کی دو کمسن بچیوں کو ان کی پھوپھی کے گھر بریلی بھیج دیا گیا، علاقہ مکینوں نے الزام عائد کیا ہے کہ انہیں ایمبولینس بھی نہیں ملی تھیں۔

واضح رہے کہ بھارت میں کرونا کی تیسری لہر خوفناک صورت اختیار کرچکی ہے کیونکہ وہاں یومیہ بنیادوں پر لاکھوں نئے کیسز سامنے آرہے ہیں اور روزانہ ڈھائی سے تین ہزار کے قریب اموات بھی ہورہی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں