59

وفاقی عدالت نے ٹرمپ کی امیدوں پر پانی پھیر دیا

واشنگٹن: (الشامی نیوز آن لائن نیوز )صدر ٹرمپ کی قانونی ٹیم کو ایک اور بڑا دھچکا پہنچا ہے، ریاست پنسلوانیا میں انتخابات کے نتائج کے خلاف صدر ٹرمپ کی اپیل مسترد ہو گئی۔

تفصیلات کے مطابق فلا ڈیلفیاکی فیڈرل کورٹ نے ٹرمپ کے وکلا کی اپیل مسترد کر دی ہے، جس پر صدر ٹرمپ کے وکلا نے فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔

وفاقی جج نے ریمارکس دیے کہ دھاندلی کے الزامات کے شواہد ہونا ضروری ہیں، وکلا نہیں ووٹرز صدر کا انتخاب کرتے ہیں، چیف جج بروکس اسمتھ نے کہا کہ انتخابی نتائج کو دوباہ جانچنا بے کار ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ دنوں پنسلوانیا میں عوامی سماعت کے دوران فون پر ٹرمپ نے کہا تھا کہ ہمارے پاس انتخابات جیتنے کے کافی ثبوت موجود ہیں اور اب دلائل سننے کے لیے صرف ایک اچھے جج کی ضرورت ہے۔

صدر ٹرمپ اپنی ضد پر قائم

دوسری طرف امریکی صدارتی انتخابات میں دھاندلی پر ٹرمپ کے متنازعہ بیانات کاسلسلہ جاری ہے، انھوں نے کہا وائٹ ہاؤس داخل ہونے کے لیے بائیڈن کو 8 کروڑ ووٹ لینا ثابت کرنا ہوگا، بائیڈن کے پاس ابھی نہ حل ہونے والا مسئلہ موجود ہے، ڈیٹرائٹ، اٹلانٹا، فلا ڈیلفیا اور ملواکی میں بڑے پیمانے پر ووٹر فراڈ ہوا۔

امریکی صدر نے ٹویٹ میں کہا کہ میڈیا کی آزادی ختم ہو چکی ہے، میڈیا کی آزادی ماضی کا حصہ ہے، میڈیا حقائق پیش نہیں کر رہا، آواز دبانے کے لیے بڑے ٹیک ادارے شراکت داری کر چکے ہیں، ہم نے 2020 انتخابات بڑے مارجن سے جیتے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں