54

سعودی عرب نے حج سے قبل کورونا منفی سرٹیفکیٹ فراڈ کی سازش ناکام بنادی، وزارت صحت کے 9 عہدیداروں سمیت 120 افراد گرفتار

ریاض: سعودی عرب نے حج کے آغاز سے 2 روز قبل جعلی کورونا ویکسین اور ٹیسٹ کے سرٹیفکیٹس کی خریداری یا فراہمی کے الزام میں 120 سے زائد افراد کو گرفتار کرلیا۔تفصیلات کے مطابق سعودی عرب کے سرکاری خبررساں ادارے ایس پی اے نیوز نے کہا کہ ملزمان میں وزارت صحت کے 9 عہدیدار بھی شامل ہیں جن سب پر الزام ثابت ہوچکا ہے۔

خیال رہے کہ رواں برس کووِڈ ویکسینیشن سرٹیفکیٹ کے حامل 60 ہزار سعودی شہری حج کا فریضہ انجام دیں گے اور یہ دوسری مرتبہ ہے کہ حج کا انعقاد محدود پیمانے پر ہورہا ہے۔

جعلی سرٹیفکیٹس کے کیس میں ملوث ملزمان نے مبینہ طور پر اپنی خدمات کی تشہیر کے لیے سوشل میڈیا کا سہارا لیا۔

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق ان خدمات میں انفیکشن اسٹیٹ تبدیل کرنا، ویکسینیشن اسٹیٹس تبدیل کرنا اور ویکسین کی ایک خوراک کو کو دو خوراک لگے ہوئے دکھانا شامل ہے۔

اس دھوکہ دہی میں 9 سعودی شہری، 12 رہائشی سمیت 21 افراد ملوث ہیں جنہوں نے 76 سعودی شہریوں اور 16 رہائشیوں کو اپنی غیر قانونی خدمات فراہم کیں۔

قبل ازیں جولائی میں ہی سعودی حکام نے اعلان کیا تھا کہ غیر قانونی طور پر کورونا وائرس کے اعداد و شمار میں گڑ بڑ کی اسی طرز کی سازش میں وزارت صحت کے 2 عہدیداران سمیت متعدد افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔تحریر جاری ہے‎

اس سلسلے میں مجرمانہ تفتیش کا آغاز کردیا گیا تھا لیکن ملزمان کی تعداد کے بارے میں نہیں بتایا گیا تھا۔

سعودی وزارت صحت کے اعداد و شمار کے مطابق مملکت میں اب تک 3 کروڑ 40 لاکھ افراد کو کورونا ویکسین کی 2 کروڑ 10 لاکھ سے زائد خوراکیں لگائی جاچکی ہیں۔

گزشتہ 24گھنٹوں کےدوران اس خلیجی ملک میں ایک ہزار 165 کورونا کیسز سامنے آئے جبکہ 15 مریض انتقال کر گئے، اب تک ملک میں 5 لاکھ 6 ہزار 125 کورونا کیسز اور 8 ہزار 35 اموات رپورٹ ہوچکی ہیں۔تحریر جاری ہے‎

سعودی عرب میں اگست تک صرف ویکسینیٹڈ افراد کو سرکاری عمارات، تعلیمی اداروں یا تفریحی مقامات پر جانے اور پبلک ٹرانسپورٹ استعمال کرنے کی اجازت ہے۔

اسی طرح سرکاری اور نجی شعبے میں بھی صرف ویکسینیٹڈ ورکرز کو اپنے کام کی جگہوں پر واپس آنے کی اجازت ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں