78

بھارت میں تباہی پھیلانے والی کورونا کی نئی قسم پوری دنیا کیلئے خطرہ ہے ، ڈبلیو ایچ او

جنیوا (الشامی نیوز آن لائن ) ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن ( ڈبلیو ایچ او) نے خبردار کیا کہ بھارت میں تباہی پھیلانے والے کورونا کی نئی قسم پوری دنیا کیلئے خطرہ ہے ، ہر ملک کو اس نئی قسم کے وائرس سے بچاؤ کیلئے سخت اقدامات اٹھانا ہوں گے ، بروقت اسے محدود نہ کیا گیا تو نقصان بہت زیادہ بڑھ جائے گا۔۔۔۔۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق عالمی ادارہ صحت کی جانب سے بھارت میں کورونا پر تحقیق کیلئے خصوصی ٹیم قائم کی گئی تھی جس کی رپورٹ اب سامنے آئی ہے ، رپورٹ میں ہ بھارت میں پائی جانیوالی کورونا کی قسم کو بی 1617کا نام دیا گیا ہے جبکہ اسے دنیا بھر کیلئے خطرہ قرار دیاگیا ہے ۔بتایا گیا ہے کہ اس نئی قسم کے کورونا نے نظام صحت تباہ کر دیا ہے ،اگر یہ وائرس دنیا بھر میں پھیل گیا تو نقصان کا اندازہ لگانا مشکل ہے

ڈبلیو ایچ او کے مطابق اس وائرس میں روز نئی تبدیلی ہو رہی ہے کیوں کہ یہ انتہائی تیزی سے ایک سے دوسرے فرد میں منتقل ہو رہا ہے، سائنسدان اسے سمجھنے کی بھرپور کوششیں کر رہے ہیں ۔ اس نئی قسم کے کورونا میں مبتلا صرف ایک شخص کی غفلت سے یہ پورے معاشرے میں پھیل سکتا ہے ، یہ بہت زیادہ متعدی اور جان لیوا ہے ۔

بی 1617 کا پھیلاؤ پریشان کن ہے ، شائد یہ نئی قسم کورنو ویکسین اور اینٹی باڈیز کیخلاف بھی مزاحمت دکھائے، طبی ماہرین کو فوری طور پر اس کا علاج ڈھونڈنا ہوگا۔

 واضح رہے کہ اس سے قبل برازیل میں پی 1، جنوبی افریقا میں بی 1351 اور برطانیہ میں 117 کورونا وائرس کی اقسام دریافت ہو چکی ہیں لیکن انڈین کورونا بی 1617 کی ہولناکیاں سب سے زیادہ ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں