56

19سالہ پاکستانی کوہ پیما شہروز کاشف نے ماؤنٹ ایورسٹ سر کرلیا

19سالہ  پاکستانی کوہ پیما شہروز کاشف نے ماؤنٹ ایورسٹ سر کرلیا 19سالہ پاکستانی کوہ پیما شہروز کاشف نے ماؤنٹ ایورسٹ سر کرلیا

ویب ڈیسک : پاکستانی کوہ پیما شہروز کاشف نےدنیا کی بلند ترین چوٹی ماؤنٹ ایورسٹ کو کامیابی سے سر کرلیا ہے۔

جی این این کے مطابق شہروز کاشف ماؤنٹ ایورسٹ سر کرنے والے پانچویں پاکستانی بن گئے۔انہوں نے پاکستان کی جانب سے صرف 19 سال کی عمر میں  ماؤنٹ   ایورسٹ سر کرنے والے کوہ پیما کا اعزاز بھی اپنے نام کر لیا۔شہروز کاشف 22 مارچ کو پاکستان سے نیپال گئے تھے،6 اپریل کو شہروز کاشف نے ماؤنٹ ایورسٹ کیلئے اپنی سمٹ کا آغاز کیا تھا۔گزشتہ روز شہروز کاشف نے بیس کیمپ 4 میں پڑاؤ کیا تھا۔ شہروز نے آج صبح 5 بج کر 5 منٹ پر ماؤنٹ ایورسٹ سر کیا۔8 ہزار 849 میٹر بلند ماؤنٹ ایورسٹ دنیا کی سب سے بلند چوٹی ہے۔ شہروز کاشف نے اپنی سمٹ کو علی سدپارہ کے نام کرنے کا اعلان کیا تھا۔

شہروز کاشف اس سے قبل  سطح سمندر سے 26 ہزار 400 فٹ کی بلندی پر واقع پاکستان کی چوتھی بلند ترین چوٹی براڈ پیک بھی سر کر چکے ہیں ۔اس وقت ان کی عمر 17برس تھی ۔ شہروز کاشف براڈ پیک پر پاکستانی پرچم لہرانے والے سب سے کم عمر کوہِ پیما ہیں۔

پاکستان کے سلسلہ کوہ ہمالیہ میں نیپال اور چین کی سرحد پر واقع ہے۔  کوہ پیما اسے سر کرنے کے لیے دونوں اطراف سے چڑھتے ہیں۔ اس کی بلندی 8848 میٹر یا 29028 فٹ ہے۔ اسے پہلی بار مئی 29، 1953ء کو ایڈمنڈ ہلری اور ٹینزنگ نورگے نے سر کیا۔ نذیر صابر پہلے پاکستانی تھے جنہوں نے اسے سر  کرنے کا اعزاز حاصل کیا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں