59

عمران کا کچن چلانے والوں کے فرنس آئل کے پلانٹ ہیں، فرنس آئل سے بجلی پیدا کرنے کیوجہ سے 122 ارب کا نقصان ہوا، مریم نواز

لاہور( الشامی نیوز) ایل این جی اس لیے دیر سے منگوائی کیونکہ اس کا کچن چلانے والوں کے فرنس آئل کے پلانٹ ہیں، فرنس آئل سے بجلی پیدا کرنے کیوجہ سے 122 ارب کا نقصان ہوا ا

ورکرز کنونشن سے خطاب میں کہنا تھا کہ  ن لیگ کا سوشل میڈیا چلانے والوں کو دل کی گہرائیوں سے سلام پیش کرتی ہوں، ن لیگ سوشل میڈیا کی ذمہ داری 8 سال پہلے نواز شریف اور ن لیگ نے دی تھی،  ن لیگ کا سوشل میڈیا آج قدآور درخت بن چکا ہے، میاں صاحب کو بتانا چاہتی ہوں کہ ان کے بیانیہ کو جس طرح سوشل میڈیا ونگ لے کر چلا اس کی مثال نہیں ملتی، نواز شریف کے سچ کے خوف سے جب نواز شریف کی آواز بند کرتے ہیں تو سوشل میڈیا کے ممبرز اور کارکنان نواز شریف کی آواز بن جاتے ہیں، سوشل میڈیا کی بدولت آج نواز شریف کی آواز پاکستان کے کونے کونے میں گونج رہی ہے، نواز شریف کے بیانیے پر پہلی مہر ن لگ کے سوشل میڈیا سیل نے لگائی،مریم نواز نے کہا کہ  پھر وہ آواز پاکستان کے عوام کی آواز بن گئی، چند باتیں کرنی بہت ضروری ہیں، آپ کے ملک میں آج جو ہو رہا ہے وہ کون کر رہا ہے اس کا شعور ہونا چاہیے، نواز شریف کو اقامہ پر باہر کر دیا گیا، اس کے بعد 2018 کا الیکشن چوری کر کہ نااہل اور سلیکٹڈ حکومت سروں پر مسلط کر دی گئی۔مریم نواز کا کہنا تھا کہ آج ایک پیج پر ہونے کے باوجود اس بس کو جس کا ڈرائیور سلیکٹڈ ہے چل کیوں نہیں رہی، آج پاکستان اور حکومت چل رہی ہے کیا، صبح اٹھنے کے بعد سب سے پہلے خبر ملتی ہے کہ آج مہنگائی مزید بڑھ گئی، آج 1 ہزار میں بھی ایک روز کی ہانڈی نہیں پوری ہوتی، گیس آ نہیں رہی لیکن بل آ رہے ہیں، کون کہتا تھا کہ سبز پاسپورٹ کی عزت کرواؤں گا، سبز پاسپورٹ کی عزت کیا ہونی تھی پوری دنیا نے پاکستان کی فلائٹس بند کر دیں، کون یہ کہتا تھا کہ ہالینڈ کا وزیراعظم سائیکل پر جاتا ہے تو کہاں ہے وہ وزیراعظم، آج جب دورے پر جاتا ہے تو پورا شہر ہی بند کر دیا جاتا ہے۔مریم نواز نے کہا کہ  تمھیں کس چیز کا خطرہ ہے، خطرہ تو نواز شریف کو ہوتاتھا، جس نے جب اقتدار سنبھالا تو ہر روز دھماکے ہوتے تھے، نواز شریف نے اپنی جان ہتھیلی پر رکھ کر دو جنگیں لڑیں، وہ جنگیں بھی لڑ رہا تھا اور عوام کے درمیان موجود بھی ہوتا تھا، اس جعلی وزیراعظم کو کہو کہ عوام کے درمیان نکل کر تو دکھائے۔مریم نواز کا ورکرز کنونشن سے خطاب میں کہنا تھا کہ  ملتان کی میری تقریر سنی تھی نہ کہ بندا بہت ایماندار ہے، ایل این جی اس لیے دیر سے منگوائی کیونکہ اس کا کچن چلانے والوں کے فرنس آئل کے پلانٹ ہیں، فرنس آئل سے بجلی پیدا کرنے کیوجہ سے 122 ارب کا نقصان ہوا لیکن بندہ بہت ایماندار ہے، عوام کو سستی بجلی دینے کے بجائے اس کا کچن چلانے والے دوستوں کو فائدہ ہوا، لیکن بندہ بہت ایماندار ہے، سپریم کورٹ نے کہا تھا کہ بلین ٹری کے درخت کہاں لگے، سپریم کورٹ نے کہا کہ لگتا ہے کہ سارے درخت بنی گالہ میں لگ گے لیکن بندہ بڑا ایماندار ہے۔مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کا کہنا تھا کہ نواز شریف کے دور میں ایک کے بعد ایک جہاز آتا تھا،آج انڈسٹری چلانے والے ایل این جی کے انتظار میں بیٹھے ہیں، پورے پاکستان ایک صوبہ چھوڑ کر کیا ایک بھی اسپتال بنایا، اسپتالوں میں اسٹریچر کا 20 روپے ریٹ مقرر کر دیا گیا ہے، اسپتالوں کے فنڈز ختم کر دیے گئے، ایک عورت کی موٹروے پر بےحرمتی کی گئی اور حکومتی اہلکار کہتے ہیں کہ کیا ضرورت تھی رات کو گھر سے نکلنے کی، کہتا تھا کہ 90 دن میں کرپشن ختم کروں گا۔مریم نواز کا کہنا تھا کہ  اگر تمھیں یہ نہیں پتا کہ کس نے آئی جی سندھ کو اغوا کیا تو تمھارا نام مسٹر خوامخواہ کیوں نہ رکھے عوام، میڈیا کسی کا آلہ کار بننے سے انکار کر دے تو دیکھتی ہوں کس میں اتنی ہمت ہے کہ میڈیا میں دراڑ ڈالے، پانامہ جب آیا تو کہا کہ چپ کر کہ استعفی دے دو ورنہ یہ ہوجائے گا اور وہ ہو جائے گا، نواز شریف جانتا تھا کہ اان کی بات سے انکار کیا تو کس چیز کا سامنے کرنا پڑے گا۔مریم نواز کا مزید کہنا تھا کہ   پی ڈی ایم بہت بڑے فیصلے کرنے جا رہی ہے، 8 دسمبر کو اب آر ہوگا یا پار ہوگا صرف 13  دسمبر کو لاہور جلسے میں فتح کا اعلان ہونا باقی ہے۔ سلیکٹڈ ٹولہ لاہور کے جلسے سے خوفزدہ ہے، منتخب نمایندوں سےدرخواست ہےکہ کسی دباؤ میں نہ آئیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں