86

عابد ملہی پکڑا گیا یا خود گرفتاری دی ؟ موٹروے زیادتی کیس میں نیا موڑ، ملزم عابد کا 14روزہ جسمانی ریمانڈ منظور

لاہور: (الشامی نیوز) موٹروے زیادتی کیس کا مرکزی ملزم عابد ملہی پکڑا گیا یا خود گرفتاری دی ؟ معاملے میں نیا موڑ سامنے آگیا۔

ذرائع کے مطابق ملزم کے والد نے علاقہ معزز سے عابد کو پولیس کے حوالے کرنے کی درخواست کی، جس پر علاقہ معزز کی گاڑی میں ہی عابد کو سی آئی اے ماڈل ٹاؤن منتقل کیا گیا۔

پولیس ذرائع کے مطابق عابد ملہی ننکانہ سے فرار ہونے کے بعد چنیوٹ چلا گیا، چنیوٹ میں کچھ دن بھینسوں کے باڑے میں کام کرتا رہا، پیر کی صبح پولیس چھاپے سے قبل فرار ہو کر مانگا منڈی آگیا، والد اور علاقہ معزز سے رابطے کے بعد عابد کو پولیس کے حوالے کیا گیا۔

 یاد رہے ملزم کی گرفتاری کیلئے شیخوپورہ، قصور سمیت 70 سے زائد مقامات پر چھاپے مارے گئے مگر ہر بار ملزم عابد ملہی بھیس بدل کر اور چکمہ دے کر رفوچکر ہوتا رہا۔ پولیس نے تاندلیانوالہ میں ملزم عابد ملہی کی موجودگی پر چھاپہ مارا، ملزم پولیس کو چکمہ دے کر مانگا منڈی والد کے گھر پہنچا،جہاں اسے پولیس کے حوالے کیا گیا

تفصیلات کے مطابق انسداددہشت گردی عدالت میں سانحہ موٹروے زیادتی  کیس کی سماعت ہوئی ،  ملزم عابد کو ایس پی سی آئی اے عاصم افتخار نے عدالت کے روبرو پیش کیا ، عدالت میں پولیس نے ابتدائی رپورٹ جمع کرا دی ۔ جس کے بعد انسداد دہشت گردی عدالت  نے ملزم عابد  کو14 روزہ جسمانی ریمانڈ پر پولیس کی تحویل میں دے  دیا ہے ۔ ملزم کا ڈی این اے اور پولی گرافک ٹیسٹ کیا جائے گا ۔مرکزی ملزم عابد ملہی کو گزشتہ روز فیصل آباد سے گرفتار کیا گیا ہے ۔  ملزم عابد کا ساتھی شفقت پہلے ہی جوڈیشل ریمانڈ پر جیل میں ہے ۔  سی آئی اے کی ٹیم نے 14 ستمبر کو موٹروے زیادتی کیس کے ملزم شفقت کو دیپالپور سے گرفتار کیا تھا۔  ملزم شفقت نے پولیس حراست میں اعتراف جرم کیا  جبکہ ملزم کا ڈی این اے بھی متاثرہ خاتون کی رپورٹ سے میچ کر گیا تھا۔مرکزی ملزم عابد کا ساتھی اقبال عرف بالا مستری پہلے ہی پولیس کی حراست میں ہے۔15 ستمبر کو انسداد دہشت گردی کی عدالت نے مرکزی ملزم شفقت سمیت گرفتار تینوں ملزمان کو 29 ستمبر تک جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا تھا۔یاد رہے کہ ملزم عابد کی گرفتاری کیلئے شیخوپورہ، قصور سمیت 70 سے زائد مقامات پر چھاپے مارے گئے مگر ہربار ملزم عابد  بھیس بدل کر پولیس کو چکمہ دے کر فرار  ہوتا رہا ہے ۔واضح رہے کہ تھانہ گجرپورہ پولیس کے مطابق منگل اور بدھ کی درمیانی شب خاتون اپنے بچوں کے ہمراہ لاہور سے گوجرانوالہ جارہی تھی۔ راستے میں پٹرول ختم ہوا تو خاتون نے گاڑی کھڑی کردی۔ اس دوران دو نامعلوم افراد آئے اور خاتون کو بچوں سمیت قریبی کھیتوں میں لے گئے۔ ملزمان نے بچوں کے سامنے خاتون کا زیادتی کا نشانہ بنایا اورنقدی لے کر فرار ہوگئے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں