60

ریفارمز سے سرکاری ہسپتال بھی نجی ہسپتالوں کی طرح چلیں گے، عمران خان

پشاور (الشامی نیوز) عوام کی صحت کا خیال رکھنا حکومت کی اولین ترجیح ہے، ہسپتال ریفارمز کا مقصد کارکردگی بہتر کرنا ہے، ریفارمز سے سرکاری ہسپتال بھی نجی ہسپتالوں کی طرح چلیں گے،

تفصیلات کے مطابق پشاور میں کارڈیک انسٹی ٹیوٹ  کے افتتاح پر وزیراعظم عمران خان نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہ دنیا میں سب سے زیادہ لوگوں کی اموات امراض قلب اور کینسر کی بیماریوں سے ہوتی ہیں۔ خیبرپختونخوا کے دارالحکومت میں امراض قلب کے ادارے کا نہ ہونا بہت بڑا ظلم تھا اور یہاں کارڈیالوجی اسپتال کی بے حد ضرورت تھی۔ انہوں نے کہا کہ ہیلتھ انشورنس سے بڑی کوئی نعمت نہیں ،ایک مشکل وقت میں وسائل کی کمی کے باوجود اسپتال بنایا، پاکستان کے پاس اتنے وسائل نہیں کہ پورے ملک میں اسپتال تعمیر کرواسکے ۔ اس ادارے کی تعمیر کا منصوبہ کافی پہلے بنایا گیا تھا لیکن فنڈز اور وسائل کی کمی تھی اور اب جب کہ کورونا وبا پھیلی ہوئی ہے اس دوران ان فنڈز کو تلاش کر کے اس منصوبے کو پایہ تکمیل تک پہنچانے پر میں صوبائی حکومت کو مبارکباد دیتا ہوں۔وزیراعظم  نے کہا کہ ایک غریب گھرانے میں جب کوئی بیماری آتی ہے تو سارا گھرانہ غربت کی لکیر کے نیچے چلا جاتا ہے ، کبھی حکمران یہ نہیں سوچتے عام آدمی کے گھر بیماری آئے گی تو و ہ کیا کرے گا۔ یہ ہسپتال نہ صرف سارے صوبے کے لیے مفید ہوگا بلکہ ایسی کوئی سہولت اس علاقے میں نہ ہونے کی وجہ سے افغانستان سے بھی مریض یہاں علاج کروانے آئیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ لوگ پوچھتے ہیں کہاں  ہے مدینہ کی ریاست؟ یہ ہے مدینہ کی ریاست ، جس میں عوام کی ذمہ داری لی گئی تھی ۔ ہیلتھ کارڈ کی وجہ سے اب پرائیویٹ سیکٹر ہسپتال بنانے کیلئے  آئے گا ، کے پی اور پنجاب میں پرائیویٹ سیکٹر ہسپتالوں کو سستی زمین دی جائے، خیبر پختونخوا کے تمام شہریوں کو ہیلتھ کارڈ دیئے جائیں گے، ہیلتھ کارڈ سے پرائیویٹ یا گورنمنٹ ہسپتال میں علاج کرایا جاسکے گا۔ اب اسپتالوں کے اسٹینڈرڈ کو قائم رکھنا صوبائی حکومت کیلئے چیلنج ہوگا ۔عمران خان کا کہنا تھا جتنا بھی ٹیکس اکٹھا ہوتا ہے اس کا آدھا قرضوں کی مد میں چلا جاتا ہے، عوام کی صحت کا خیال رکھنا حکومت کی اولین ترجیح ہے، ہسپتال ریفارمز کا مقصد کارکردگی بہتر کرنا ہے، ریفارمز سے سرکاری ہسپتال بھی نجی ہسپتالوں کی طرح چلیں گے، سزا اور جزا کا قانون ختم ہونے سے گورنمنٹ ہسپتال نیچے آگئے۔سانحہ اے پی ایس  سے متعلق بات کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ سانحہ اے پی ایس کی وجہ سے دل آج بھی افسردہ ہے ، پوری قوم نے متحد ہوکر دہشت گردی کو شکست دی ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں