125

موٹر سائیکل پر بجلی کی گیارہ ہزار وولٹیج کیبل گر گئی، پی ایچ ڈی ڈاکٹر آفتاب بیٹے اور پوتے سمیت جاں بحق

سانگھڑ کی تحصیل ٹنڈو آدم میں موٹر سائیکل پر بجلی کے گیارہ ہزار وولٹ کے تار گرنے سے تین افراد جاں بحق ہو گئے ہیں۔ 

الشامی نیوز کے ذرائع کے مطابق جاں بحق ہونے والوں میں باپ، بیٹا اور پوتا شامل ہیں۔

مستند ذرائع نے الشامی نیوز کو بتایا کہ موٹر سائیکل سوار اسٹنٹ کمشنر ہاؤس کے قریب سے گزر رہے تھے کہ گیارہ ہزار وولٹ کا تار ان کے اوپر آ گرا۔ حادثے کی اطلاع ملنے کے بعد پولیس نے میتوں کو اسپتال منتقل کر دیا۔

اطلاعات کے مطابق تینوں افراد قریبی گاؤں کے رہائشی ہیں۔ پولیس نے لاشوں کو پوسٹ مارٹم کے بعد ورثا کے حوالے کر دیا ہے۔

قبل ازیں قاتل ڈور نے اعلیٰ تعلیم یافتہ نوجوان استاد کی جان لے لی تھی۔ افسوسناک سانحہ اس وقت پیش آیا جب کیمسٹری میں پی ایچ ڈی ڈاکٹر آفتاب احمد صبح اپنے گھر سے کالج جار ہے تھے۔

تفصیلات کے مطابق بیرون ملک سے کیمسٹری میں پی ایچ ڈی ڈاکٹر آفتاب احمد اپنے فرائض منصبی کی ادائیگی کے لیے دیال سنگھ کالج جا رہے تھے۔

ابتدائی اطلاعات کے مطابق قاتل ڈور پھرنے سے ان کی شہ رگ کٹ گئی اور وہ زیادہ خون بہہ جانے کے باعث انتقال کر گئے۔ اس افسوسناک سانحہ پر شہر میں سخت غم و غصے کی لہر دوڑ گئی تھی۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹس پربھی اس افسوسناک سانحے پہ شدید رنج و غم کا اظہار کیا گیا تھا اور ساتھ ہی لوگوں کی جانب سے حکومت و انتظامیہ کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا جارہا تھا

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں