111

اپوزیشن کا جلسہ: راستے بند کرنے کیلئے کنٹینرز منگوا لیے گئے

لاہور(الشامی نیوز): حکومت کیخلاف حزب اختلاف کی جماعتوں کے اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک مومنٹ(پی ڈی ایم) کے16 اکتوبر ہونے والے جلسے سے قبل داخلی و خارجی راستے بند کرنے کے لیے کنٹینرز منگوا لیے گئے ہیں۔

ذرائع کے مطابق جلسہ سے قبل رائیونڈ انتظامیہ نےجاتی امرا روڈ کے گرد کنٹینرز کی پکڑ دھکڑ شروع کر دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق کنٹینر ڈرائیورز نےالزام لگایا ہے کہ ان کی گاڑیوں کو پولیس نے پکڑ کر جاتی امرا روڈ پر کھڑا کر رکھا ہے۔ اطلاعات کے مطابق پکڑے گئے کنٹینرز رائیونڈ تھانہ کی چوکی کے باہر کھڑا کیے گئے ہیں۔

رابطہ کرنے پر اے ایس پی رائیونڈ نے کنٹینروں کی پکڑ دھکڑ پر موقف دینے سے انکار کر دیا ہے۔

خیال رہے کہ اپوزیشن کی جانب سے پہلا جسلہ16 اکتوبر کو گوجرانوالہ میں کرنے کی تیاریاں کی جا رہی ہیں۔ حزب اختلاف کا کہنا ہے کہ پہلا جلسہ پی ڈی ایم کی تحریک کے رخ کا تعین کرے گا۔

ن لیگی رہنماؤں کا کہنا ہے کہ بینرز اتارنے اور پکڑ دھکڑ کرنے کا کوئی فائدہ نہیں ہے کیونکہ حکومت مخالف جلسے اور قافلے نہیں رکیں گے۔ پی ڈی ایم کے جلسے کو حکومت کیخلاف ریفرنڈم بھی قرار دیا جا رہا ہے۔

اپوزیشن کی جانب سے گوجرانوالہ کی ضلعی انتظامیہ جلسے کی اجازت دینے کے لیے14 اکتوبر تک کی ڈیڈ لائن دی گئی ہے۔

پاکستان مسلم لیگ (ن) اور گوجرانوالہ انتظامیہ کے درمیان پی ڈی ایم جلسے سے متعلق ہونے والے مذاکرات کا پہلا دور ناکام ہو چکا ہے۔

ن لیگ رہنما رانا ثنا اللہ نے کہا ہے کہ اگر ضلعی انتظامیہ ہمیں اجازت نہیں دیتی ہے تو پھر جلسہ جی ٹی روڈ پر ہوگا۔

ذرائع کے مطابق گزشتہ روز مقامی ضلعی انتظامیہ نے پی ڈی ایم کو جناح اسٹیڈیم میں جلسہ کرنے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا ہے۔ انکار کے بعد ن لیگی رہنماؤں نے اعلان کیا تھا کہ پی ڈی ایم کا جلسہ جی ٹی روڈ پر ہوگا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں