42

کورونا سے یورپی فٹبال کلبوں کو اربوں ڈالر کے نقصان کا سامنا

برسلز: (ویب ڈیسک) یورپی فٹ بال کلبوں کی ایسوسی ایشن نے ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ کورونا وبا کے دوران یورپ کی امیر فٹبال کلبوں کو اربوں ڈالر کے نقصان کا سامنا ہو سکتا ہے۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کی رپورٹ کے مطابق یونین برائے یورپی فٹ بال ایسوسی ایشن (UEFA) نے اپنی سالانہ رپورٹ میں واضح کیا کہ مالی اعتبار سے کم امیر فٹ بال کلبوں کے ساتھ ساتھ مالی طور پر مستحکم فٹ بال کلبز کو کورونا وبا کے دوران شدید مالی خسارے کا سامنا ہے۔

اس رپورٹ میں مالی نقصان کا تخمینہ سن 2019/20 اور سن 2020/21 کے سالوں کو سامنے رکھ کر لگایا گیا ہے۔ تنظیم نے فٹ بال کلبوں کو مستقبل کے چیلجز کا مقابلہ کرنے کے لیے تیار رہنے کا عندیہ دیا گیا ہے۔

یہ رپورٹ تنظیم کے صدر الیگزانڈر چیفرین نے پیش کی۔ انہوں نے بتایا کہ سن 2019/20 اور 2020/21 کے سالوں میں فٹ بال کلبوں کو قریب نو بلین یورو ( ساڑھے دس بلین ڈالر سے زائد) تک کے نقصان کا سامنا ہو سکتا ہے۔

چیفرین نے فٹ بال کلبوں کی انتظامیہ سے کہا کہ مشکل وقت سامنے ہے اور انہیں سخت چیلنجز کا سامنا ہے۔ یہ امر اہم ہے کہ گزشتہ برس کی رپورٹ میں انہوں نے واضح کیا تھا کہ فٹ بال کلبز مضبوط اور متحد ہیں اور وہ ہمت و استقامت کے ساتھ وبا کے چیلنج کا مقابلہ کریں گے۔

الیگزانڈر چیفرین نے رواں برس کی رپورٹ پیش کرتے ہوئے کہا کہ پروفیشنل فٹ بال کو انتہائی مشکل صورت حال درپیش ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ فٹ بال کلبز کا انحصار میچ دیکھنے آنے والے شائقین پر ہوتا ہے اور وبا میں میچز جاری رکھے گئے ہیں لیکن وہ (تماشائی) موجود نہیں ہیں۔

یورپی ممالک کی قومی فٹ بال ٹورنامنٹس اور نمایاں کلبوں پر مشتمل مقابلوں کا انعقاد تو جاری ہے لیکن ابھی تک وبا کو کنٹرول کرنے کے انتطامات جاری ہیں۔ اس ضمن میں یورپ بھر میں زور و شور سے ویکسینیشن جاری ہے۔

جرمنی کی قومی فٹ بال لیگ بنڈس لیگا کے سبھی میچ کھیلے تو گئے لیکن انہیں دیکھنے کے لیے شائقین گراؤنڈز میں موجود نہیں تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں