61

بغیر اجازت وزیراعظم سے ملاقات کیوں کی؟ مصباح اور اظہر طلب

اسلام آباد: (الشامی نیوز ) ہیڈکوچ مصباح الحق اور کپتان اظہر علی کو پی سی بی کی اجازت کے بغیر وزیراعظم عمران خان سے ملاقات پر شوکاز نوٹس کا سامنا ہے۔

مصباح، حفیظ اور اظہر نے ڈیپارٹمنٹ میں کھلاڑیوں کے روزگار پر وزیراعظم کو قائل کرنے کی کوشش کی مگر پی سی بی چیئرمین کو یہ بات پسند نہ آئی ۔

ذرائع کے مطابق پی سی بی سے بغیر اجازت وزیراعظم سے ملاقات کرنے پر مصباح اور اظہر کے خلاف کارروائی کا امکان ہے۔ سینٹرل کنٹریکٹ میں شامل مصباح الحق اور اظہر علی پی سی بی کے ملازم ہیں اور اس اعتبار سے انہیں وزیراعظم سے ملاقات کے لیے پیشگی اطلاع دینا اور اجازت لینا ضروری تھا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ دونوں افراد کو پی سی بی کے چیئرمین احسان مانی نے طلب کر لیا ہے اور ان سے خلاف ورزی کرنے پر پوچھا جائے گا التبہ کوئی انضباطی کارروائی کا امکان نہیں ہے۔

میٹنگ میں موجود محمد حفیظ سینٹرل کانٹریکٹ میں نہ ہونے کی وجہ سے بچ گئے۔

وزیراعظم عمران خان نے دو ٹوک الفاظ میں کہا ہے کہ ڈیپارٹمنٹل کرکٹ کا اسٹرکچر واپس نہیں آئے گا۔

وزیراعظم نے واضح جواب دیا کہ ڈیپارٹمنٹل کرکٹ کے اسٹرکچر واپس نہیں آئےگا، ڈیپارٹمنٹ سےکھیلنےسےکھلاڑی بہت سکون میں ہوتاہے، کھلاڑی کونوکری مل جاتی ہےتووہ اوپرجانےکی کوشش نہیں کرتا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں