105

کسی کو کراچی کی فکر نہیں، پی ڈی ایم جلسے میں کراچی کے مسائل پر بات نہیں ہوئی، مصطفیٰ کمال

کراچی: (الشامی نیوز) سربراہ پاک سرزمین پارٹی (پی ایس پی) مصطفیٰ کمال نے کہا ہے کہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے گزشتہ روز کے جلسے میں کراچی کے مسائل پر کوئی بات نہیں کی گئی۔ کسی کو کراچی کا درد نہیں ہے گیارہ کی گیارہ پارٹیاں نے کراچی کے مسائل سے منہ پھیر لیا ہے

میڈیا سے گفتگو میں ان کا کہنا تھا کہ کراچی میں کتوں کے کاٹنے کی ویکسین بھی دستیاب نہیں، پیپلز پارٹی کے رہنما گزشتہ روز ایسے تقریر کر رہے تھے جیسے وہ کبھی حکومت میں نہیں رہے۔

انہوں نے کہا کہ مردم شماری میں کراچی کے عوام کی گنتی درست نہیں کی گئی، کراچی میں ہونے والے جلسے میں مردم شماری سے متعلق معاملے پر بات نہیں کی گئی۔

مصطفیٰ کمال کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے کراچی کےلیے 1100 ارب روپے کا پیکج دیا، اسی دن کہا تھا پیکج لالی پوپ ہے۔

پی ایس پی کے سربراہ نے کہا کہ کراچی میں گیس اور بجلی سب سے زیادہ مہنگی ہے اور اب حکومت نے بجلی مزید مہنگی کردی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ کراچی میں لسانی بنیادوں پر7 اضلاع بنائے گئے ہیں، گزشتہ سال این ایف سی ایوارڈ میں سندھ کو800 ارب روپے ملے۔

سربراہ پی ایس پی نے کہا کہ سندھ میں 70 لاکھ بچے اسکولوں سے باہر ہیں جب کہ صرف کراچی میں11 ہزار گھوسٹ اسکول ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سندھ کو توڑنے کی سازش کی گئی۔

قبل ازیں مصطفیٰ کمال نے کہا تھا کہ ملک میں اقتدار بچانے اور گرانے کا گیم آن ہے۔ اپوزیشن اور حکومت نام کی کوئی چیز نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ آپ لوگ بیک ڈور رابطے کررہے ہیں، عوام کو بے وقوف بنا رہے ہیں۔ حکومت سے نجات حاصل کرنا چاہتے ہیں آپ استعفیٰ دیں ،حکومت ختم ہوجائے گی۔

مصطفیٰ کمال نے کہا کہ نوازشریف اخباروں کی زینت بنے ہوئے ہیں۔ نوازشریف جمہوریت کے علمبردار بنے ہوئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں اگر کسی کے پاس زیادہ پیسہ ہے تو وہ وزیراعلیٰ سندھ ہیں۔ پیپلزپارٹی لوکل گورنمنٹ انتخابات کراتی نظر نہیں آتی۔ کراچی میں 6ماہ میں ڈیڑھ لاکھ بچوں کو کتوں نے کاٹا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں