116

کراچی میں اس وقت کوئی فعال ماسٹر پلان نہیں ہے: شمیم نقوی

کراچی ( الشامی نیوز) سندھ اسمبلی میں قائدِ حزبِ اختلاف فردوس شمیم نقوی نے ملک کے سب سے بڑے شہر کے بڑھتے مسائل، گھٹتے وسائل، بنیادی سہولتوں کے لیے پریشان ہوتے ہیں

فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ کراچی کی آبادی کے بڑھنے کے تناسب سے ماسٹر پلان بنایا جائے، ٹرانسپورٹ کا یہ حال ہے کہ لوگ بسوں کی چھتوں پر سفر کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کور آرڈی نیشن کمیٹی کا مینڈیٹ کچھ اور ہے، کو آرڈینیشن کمیٹی کا مینڈیٹ صرف مخصوص منصوبوں کے لیے ہے۔

رہنما پی ٹی آئی نے کہا کہ سندھ میں ایک حکومت کو 12 سال گزر گئے، آج وہ کہہ رہے ہیں کہ ماسٹر پلان بنائیں گے۔

فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ کراچی کے مسائل کا حل آج تک کسی نے نہیں نکالا، شہر کی ضرورت کے لحاظ سے اسے آدھا پانی مل رہا ہے، کراچی سرکلر ریلوے بند کر دی گئی، کراچی ٹرانسپورٹ کمپنی بھی بند کر دی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں