106

اگر میں گرفتار ہوئی تو میاں نواز شریف لندن سے بیٹھ کر لیڈ کریں گے، مریم نواز

لاہور:(الشامی نیوز) مریم نواز کا کہنا ہے کہ میں پہلے بھی اپنے والد کے سامنے گرفتار ہوئی اب بھی تیار ہوں اگر میں گرفتار ہوئی تو میاں نواز شریف لندن سے بیٹھ کر لیڈ کریں گے۔
مسلم لیگ ن کی رہنما مریم نواز کی پریس کانفرنس ان کا کہنا تھا کہ  نواز شریف نے ایک لفظ نہیں بولے پہلے لیکن جب معاملات بہت زیادہ خراب ہوگئے ملک کے تو تب بولنا شروع ہوئے، میڈیا بھی خوف کی زنجیروں میں جکڑا رہا،لیکن اب سب خوف ختم کرکے بول رہے ہیں،جب ہم نے یہ راستہ چنا تھا تو ہمیں پتہ تھا کہ یہ مشکل راستہ ہےاور مشکل راستے پر قیمت ادا کرنا پڑتی ہے،میں پہلے بھی اپنے والد کے سامنے گرفتار ہوئی اور اب بھی  گرفتار ہونے کیلئے تیار ہوں ۔مریم نواز کا کہنا تھا کہ میں گرفتار ہوتی ہوں تو ہوجاؤں مسلم لیگ ن کے پاس ورکرز کی کمی نہیں ہے،میں گرفتار ہوں گی تو میرے بعد شاہد خاقان عباسی ہونگے،شاہد خاقان عباسی گرفتار ہونگے تو رانا ثنا اللہ ہوں گے،پھر مریم اورنگزیب اور پھر باقی کے تمام کارکن،آپ گرفتار کرتے ہوئے تھک جائیں گے لیکن مسلم لیگ ن کے کارکن کم نہیں ہونگے،مشکل وقت ہے لیکن مسلم لیگ ن کے ورکرز نے میاں صاحب کے بیانیے کو اپنایا،ہمارے رہنما جیل گئے، مشکل وقت کا سامنا کیا اور جیل سے باہر آکر پھر اپنے بیانیے پر رہے،مسلم لیگ ن کا ووٹ بینک کم نہیں زیادہ ہورہا ہے،یہ حکومت ایک جھٹکا بھی برداشت نہیں کرسکے گی جو حکومت سازشوں کی بنیاد پر بنی ہو وہ اپنے وقت سے پہلے گر جاتی ہے،عمران خان سازش سے آیا ہوا ہے،میں ایسی حکومت سے ڈائیلاگ کیا میں ایسی حکومت کو ہی نہیں مانتی،ہمیں اس حکومت کیخلاف پہلے دن سے لڑنا چاہیےتھا،ن لیگ میں طاقت ہے، میاں صاحب کی ایک تقریر پر 10،10 لوگ جواب دے رہے ہوتے ہیں،میاں صاحب نے آج زیادہ صاف بات کی ہے،کوئی بھی جماعت ہو اپوزیشن کی ہم سب کو متحد ہوکر چلنا چاہیے،پی پی پی، ن لیگ، جے یو آئی ف تمام ایک ساتھ چلیں گے۔

مریم نواز کا  مزید کہنا تھا کہ آج کل جس پر غداری کا الزام لگتا ہے اس سے بڑا کوئی محب وطن نہیں،حکومتی لوگ میاں صاحب کی باتوں کا جواب دیں،میاں صاحب کی باتوں کو گھمانے پھیرانے کی بجائے سیدھی بات کرنی چاہیے،اور جواب دیں کہ کیا میاں نواز شریف نے کوئی غلط بات کی،کسی نا کسی کو تو یہ بات کرنی ہی تھی،ہم ابھی بھی پولیٹیکل حریف ہیں پی پی سے لیکن اس حکومت کے ساتھ ہم مل کرلڑیں گے،پی پی ہماری پولیٹیکل حریف ہے لیکن ہماری دشمن نہیں ہے،جو نواز شریف نے بات کی اس میں کچھ غلط بات نہیں تھی،جب پاکستان کے دفاع کی بات ہوتی ہے تو پاکستان سب سے آگے ہوتے ہیں،نوازشریف چوتھی مرتبہ بھی وزیراعظم بنیں گے ، مریم نواز کہتی ہیں  نوازشریف لندن سے تحریک کی قیادت کریں گے ، مجھے گرفتار کر لیا گیا تو سنٹرل کمیٹی نوازشریف سے رہنمائی لے کر تحریک چلائے گی ،میرے پر دہشت گردی کا مقدمہ بنایا ہوا جبکہ حملہ بھی مجھ پر ہوا تھا،میں ضمانت قبل از گرفتاری کبھی نہیں کروانگی۔ 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں