50

ٹرمپ کے حامی سڑکوں پر نکل آئے احتجاجی دھرنا اور ریلیاں

نیویارک (الشامی نیوز/آن لائن نیوز) صدر ٹرمپ کی انتخابی مہم نے نہ صرف پنسلوینیا، جارجیا اور دیگر اہم ریاستوں کی عدالتوں میں انتخابی عذر داریاں دائر کر کے چیلنج کرنے کی کارروائی شروع کر دی ہے بلکہ بعض اطلاعات کے مطابق صدر ٹرمپ کےحامی مختلف ریاستوں میں احتجاجی ریلیاں نکال کر پریشر بڑھانے کی منصوبہ بندی بھی کر رہے ہیں۔ ڈیموکریٹک جوزف بائیڈن 7؍ کروڑ سے زائد پاپولر ووٹ لیکر منتخب صدر قرار پائے ہیں ۔ بعض اہم ریاستوں میں اب بھی ووٹوں کی گنتی اور نتائج کی سرکاری طور پر تصدیق نہیں ہو سکی اور عملی طور پر 538؍ الیکٹورل ووٹوں پر مشتمل الیکٹورل کالج دسمبر میں اپنے ووٹوں کا استعمال کرنے کی رسمی کارروائی کرے گا۔ لیکن صدر ٹرمپ نے مختلف بے قاعدگیوں اور قانونی عذرداریوں کا جواز بناتے ہوئے ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا مطالبہ کرتے ہوئے جوزف بائیڈن کے انتخاب کو چیلنج کر دیا ہے۔ بعض ریاستی عدالتوں نے ڈونالڈ ٹرمپ کی انتخابی مہم کی جانب سے دائر کردہ عذر درایاں خارج بھی کر دی ہیں لیکن ٹرمپ کے حامی احتجاجی ریلیاں نکالنے اور وفاقی

سپریم کورٹ تک بائیڈن کے انتخاب کو چیلنج کرنے پر اصرار کر رہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں