56

بادشاہ کی اپنی سوتیلی بہن سے زندگی میں پہلی ملاقات

برسلز: (الشامی نیوز /آن لائن نیوز ) یورپی ملک بیلجیئم کے بادشاہ فلپ نے 60 سال کی عمر میں زندگی میں پہلی بار اپنی سوتیلی بہن ڈیلفین سے ملاقات کی، ڈیلفین نے اپنی شاہی حیثیت کی قانونی جنگ میں فتح یاب ہونے کے بعد اپنے بھائی سے ملاقات کی ہے۔

مقامی میڈیا کے مطابق بادشاہ فلپ نے اپنی سوتیلی بہن ڈیلفین سے زندگی میں پہلی ملاقات کی، بادشاہ کے والد بادشاہ البرٹ دوئم کے ایک خاتون سے تعلقات رہے تھے، ڈیلفین اسی خاتون کی بیٹی ہیں۔

شاہی محل نے بھی ملاقات کی باقاعدہ تصدیق کردی ہے۔

بادشاہ فلپ اور ان کی سوتیلی بہن ڈیلفین کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا کہ اس ملاقات کے دوران کافی دیر تک تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا اور یہ ملاقات دونوں کے درمیان ایک بہتر خاندانی تعلق کی شروعات ہے۔

اس سے قبل ڈیلفین کے بارے میں کسی کو علم نہیں تھا، سابق بادشاہ البرٹ نے کبھی ان کی پیدائش کا ذکر نہیں کیا تھا یہاں تک کہ وہ خود منظر عام پر آئیں اور لوگوں کو ان کے بارے میں علم ہوا۔

اس کے بعد ڈیلفین نے اپنی شاہی حیثیت کے لیے کئی سال پر محیط ایک طویل قانونی جنگ لڑی جو اسی ماہ اختتام کو پہنچی، عدالت نے اپنے فیصلے میں ڈیلفین کو بیلجیئم کے سابق بادشاہ البرٹ دوئم کی بیٹی تسلیم کر لیا۔

ڈیلفین اب کوئی عام شہری نہیں بلکہ ایک شہزادی ہیں، جن کا پورا نام ڈیلفین آف ساکس کوبرگ ہے۔

شاہی خاندان میں شمولیت کے بعد ان کی اپنے برسر اقتدار بھائی سے یہ پہلی ملاقات تھی۔ ڈیلفین کی عمر اس وقت 52 برس ہے اور پیشے کے لحاظ سے وہ ایک آرٹسٹ ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں