105

سعودی کابینہ کے شاہ سلمان کی صدارت میں اہم فیصلے

ریاض:(الشامی نیوز /آن لائن نیوز ) سعودی کابینہ نے قانون محنت میں ترمیم کی منظوری دینے کے ساتھ 14 فیصلے بھی جاری کیے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز کی زیرصدارت بدھ کو آن لائن اجلاس ہوا جس میں بتایا گیا کہ قانون محنت میں ترمیم کی تفصیلات ام القری سرکاری گزٹ میں شائع کی جائیں گی۔

سعودی فرمانروا شاہ سلمان نے کابینہ کے ارکان کو سلطنت عمان کے فرمانروا سلطان ھیثم بن طارق اور نائیجیریا کے صدر محمد بخاری کے ساتھ ٹیلی فونک رابطوں کے نتائج سے آگاہ کیا۔ نائیجریا کے صدر سے عالمی تیل منڈی میں استحکام اور توازن کی بحالی کے لیے جاری کاوشوں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

سعودی کابینہ نے کرونا وائرس سے متاثر ہونے والوں اور مرنے والوں کی تعداد میں ریکارڈ کمی پر اطمینان کا اظہار کیا۔اجلاس میں ملکی اور بین الاقوامی سطحوں پر کرونا وائرس کی تازہ صورت حال پر رپورٹیں بھی پیش کی گئی تھیں۔

کابینہ اجلاس میں ہنگامی حالات کے حوالے سے تعلیمی سال کی تیاریوں کا جائزہ لیا گیا اجلاس میں کابینہ کو بتایا گیا کہ طلبا وطالبات، اساتذہ اور تربیتی عملے کی صحت وسلامتی کے لیے موثر انتظامات کر لیے گئے ہیں۔سعودی کابینہ نے امید ظاہر کی کہ نیا تعلیمی سال ملک وقوم کے لیے مفید ثابت ہوگا۔

اجلاس میں کابینہ نے لیبیا میں جنگ بندی سے متعلق لیبیا کی پارلیمنٹ اور صدارتی کونسل کی طرف سے جاری کردہ اعلان کا پھر خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ ملکی مفاد کو ہر مفاد پر بالا رکھ کر قومی سیاسی مکالمہ ناگزیر ہے۔

سعودی کابینہ ے لیبیا کے برادر عوام کے امن واستحکام کا ضامن پائیدار حل ملک کے لیے ضروری ہے، حل ایسا ہو کہ خارجی مداخلت کے سدباب کا باعث بنے۔

سعودی فرمانروا شاہ سلمان کی زیر صدارت اجلاس میں منصوبہ بند طریقے سے جان بوجھ کر مملکت میں شہریوں اور سول تنصیبات پر ایران کے حمایت یافتہ حوثی دہشتگردں کے دھماکہ خیز ڈرونز اور بیلسٹک میزائل حملوں کی سخت الفاظ میں مذمت کی۔

کابینہ نے کھیلوں کے شعبے میں جیبوتی کے ساتھ تعاون کے معاہدے، برازیل کے ساتھ ثقافتی تعاون کی مفاہمت کی یادداشت، امریکا کے ساتھ آباد کاری کی مفاہمتی یادداشت، عالمی ادارہ محنت کے تحفظ اجرت معاہدے، ماریطانیہ کے ساتھ شہری خدمات کے سلسلے میں مفاہمتی یادداشت کی منظوری دی۔

قائم مقام وزیر اطلاعات ڈاکٹر ماجد القصبی نے اجلاس کے بعد ایس پی اے کو بتایا کہ کابینہ نے امید ظاہر کی کہ نیا ہجری سال 1442 عربوں، مسلمانوں اور دنیا بھر کے انسانوں کے لیے خیر وبرکت اور امن واستحکام کا سال ثابت ہو۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں