123

اپنی نااہلی پر پردہ ڈالنے کیلئے تبلیغی جماعت کو قربانی کا بکرابنایا گیا، ممبئی ہائیکورٹ

اپنی نااہلی پر پردہ ڈالنے کیلئے تبلیغی جماعت کو قربانی کا بکرابنایا گیا، ممبئی ہائیکورٹ

بھارتی عدالت نے ہی مودی حکومت کی سازش کی قلعی کھول دی۔ بھارتی عدالت کے مطابق مودی حکومت نے اپنی نااہلی پر پردہ ڈالنے کیلئے تبلیغی جماعت کو قربانی کا بکرابنایا۔

بھارتی شہرممبئی کی عدالت عالیہ( بمبئی ہائیکورٹ) نے اپنے ایک فیصلے میں مودی حکومت کی سازشوں کا کچا چٹھا کھول دیا ہے۔ بمبئی ہائیکورٹ نے فیصلے میں کہا کہ مودی حکومت نے اپنی نااہلی پر پردہ ڈالنے کے لیے کورونا کے معاملے پر تبلیغی جماعت کو قربانی کا بکرا بنایا ہے۔

بمبئی ہائی کورٹ نے 34 افراد کے خلاف کرمنل مقدمات کالعدم قرار دے دیئے، جن میں 28 تبلیغی جماعت کے غیر ملکی رکن ہیں

عدالت نے فیصلے میں کہا کہ سیاسی حکومت کسی بھی وبا کے دوران دوسروں کوقربانی کا بکرا بنانے کی کوشش کرتی ہیں۔جب وبا یا پریشانی آتی ہے تو حکومت قربانی کا بکرا تلاش کرنے کی کوشش کرتی ہے جس پر ملبہ ڈالا جا سکے ۔

واضح رہے کہ مودی حکومت نے نئی دہلی میں تبلیغی جماعت کے مرکز نظام الدین میں ہونے والے اجتماع کو بھارت میں کورونا کے پھیلاؤ کی وجہ قرار دے کر غیر ملکی افراد پر کریمنل مقدمات درج کئے تھے۔

جن مقدمات کو آج بمبئی ہائیکورٹ نے کالعدم قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ مودی حکومت کی سازش تھی جس کی مدد سے ہندوتوا نظریے کی حامی مودی سرکار نے مسلمانوں پر بےجا پابندیاں عائد کیں اور اس ضمن میں مسلمانوں کو خاص طور پر نشانہ بنایا گیا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں