55

7 ماہ کی بندش کے بعد آج سے مسجد الحرام میں عمرہ کی ادائیگی شروع

ریاض :(الشامی نیوز/ آن لائن نیوز) کورونا وائرس کے باعث کئی ماہ سے بند عمرہ کی ادائیگی کا سلسلہ آج سے شروع ہورہا ہے ۔
تفصیلات کے مطابق مکہ مکرمہ میں مسجد الحرام سات ماہ کے بعد عمرہ زائرین کے پہلے گروپ کیلئے سخت احتیاطی تدابیر کے ساتھ آج (اتوار) کھول دی گئی ہے ۔ سعودی وزارت حج وعمرہ کی ایپلی کیشن Eatmarna پر عملدرآمد کے بعد عمرہ زائرین کا پہلا گروپ مسجد الحرام میں داخل ہوا ۔ پہلے مرحلے میں اندرون مملکت سے سعودی شہریوں اور مقیم غیرملکیوں کو عمرہ اور زیارت کی سعادت حاصل کریں گے ۔ یومیہ چھ ہزار عازمین کے کوٹہ کو سہولت فراہم کرنے کیلئے وزارت حج وعمرہ نے ملاقات کے پانچ مقامات مقرر کئے ہیں جہاں عمرہ زائرین جمع ہوں گے اور محکمہ صحت کے ماہرین کے ساتھ مل کر بسوں پر مسجد الحرام جائینگے۔ عمرہ زائرین کے جسم کا درجہ حرارت اور دوسرے ضروری معاملات چیک کرنے کیلئے مسجد الحرام کے داخلی دروازوں اور ہال کے اندر انسانی درجہ حرارت چیک کرنیوالے کیمرے نصب کئے گئے ہیں ۔ مسجد الحرام میں عمرہ کی ادائیگی کی نگرانی کیلئے ایک ہزار ملازمین کو تربیت بھی دی گئی ہے۔سعودی خبررساں ادارے کے مطابق دنیا بھر کے مسلمانوں کی جانب سے عمرہ و زیارت کی ادائیگی کی اجازت کی آرزو اور کورونا وائرس کی تازہ صورتحال کے پیش نظر سعودی قیادت کی جانب سے عمرہ اور زیارت کی مرحلہ وار بتدریج اجازت دی گئی  ہے، اورضروری حفاظتی اقدامات کے ساتھ عمرہ اور زیارت کو یقینی بنایا جارہا ہے ۔دوسرے مرحلے کی شروعات 18 اکتوبر2020 سے ہوگی ۔ جس کے تحت سعودی شہریوں اور مقیم غیرملکیوں کو عمرہ، زیارت اور نمازوں کی اجازت ہوگی۔ روزانہ 15 ہزارعمرہ زائر اور چالیس ہزار افراد مسجد الحرام میں نماز ادا کرسکیں گے۔ اس موقع پر حفاظتی تدابیر کا اہتمام ہوگا۔ علاوہ ازیں مسجد نبوی کی گنجائش کے 75 فیصد تک نمازیوں کو جانے کی اجازت ہوگی۔تیسرے مرحلے کی شروعات یکم نومبر2020 سے ہوگی۔ اس دوران سعودی شہریوں اور مملکت کے اندر اور باہر سے غیرملکیوں کو عمرہ، زیارت اور نمازوں کی اجازت دی جائے گی۔ یہ سلسلہ عالمگیر وبا کے خاتمے یا اس کا خطرہ ختم ہوجانے کے رسمی اعلان تک جاری رہے گا ۔ مرحلہ وار اہتمام کے تحت روزانہ 20 ہزار زائر ین عمرہ کرسکیں گے اور 60 ہزار کو مسجد الحرام میں احتیاطی تدابیر کے ساتھ نماز ادا کرنے کا موقع فراہم ہوگا ۔ اسی تناسب سے مسجد نبوی میں حفاظتی تدابیر کے ساتھ نماز ادا کی جا سکے گی۔چوتھے مرحلےکے تحت سعودی شہریوں، مقیم غیرملکیوں اور بیرون ممالک افراد کوعمرہ، زیارت اور نمازوں کی مکمل اجازت ہو گی ۔ یہ اجازت اس وقت دی جائے گی جب متعلقہ حکام وبا کے خطرات ختم ہوجانے کا فیصلہ کرلیں گے۔ بیرون ممالک سے عمرہ اور زیارت کی اجازت تدریجی طور پر دی جائے گی۔ ایسے ملکوں کے باشندوں کو عمرہ اور زیارت کے ویزے جاری کیے جائیں گے جن کی بابت وزارت صحت یہ فیصلہ دے گی کہ وہاں کورونا کی وبا کے حوالے سے صحت کے لیے خطرات ختم ہوگئے ہیں۔سعودی وزارت داخلہ نے عمرہ، نماز اور زیارت کرنے والوں سے اپیل کی ہے کہ وہ حفاظتی تدابیر کی پابندی کریں ۔ صحت ضوابط کے تحت ماسک، سماجی فاصلے اور اشیا کو نہ چھونے کا اہتمام کریں۔واضح رہے کہ کورونا وبا کی وجہ سے مارچ میں عمرے پر پابندی عائد کی گئی تھی اورسات ماہ بعد یہ پابندی اٹھائی جارہی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں