66

ہم ڈرنے والے نہیں ہیں اپنے موقف پر قائم ہیں، مولانا فضل الرحمان

کراچی (الشامی نیوز) ،ہمیں مجبورکیاجارہاہےکہ ہم دھاندلی کےنتیجےمیں قائم حکومت کوتسلیم کرلیں،ہمیں ڈرایادھمکایاگیا،لالچ دی گئی ہم ڈرنے والے نہیں ہیں پی ڈی ایم کے سربراہ فضل الرحمان کا جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ کراچی سےہم نےآزادی مارچ کاآغازکیااورآپ نےخلوص سےہماراساتھ دیا، پی ڈی ایم کامقصدآزادجمہوری فضاؤں کوبحال کرناہے،ہمیں مجبورکیاجارہاہےکہ ہم دھاندلی کےنتیجےمیں قائم حکومت کوتسلیم کرلیں،ہمیں ڈرایادھمکایاگیا،لالچ دی گئی

،ہم ڈرنےوالےنہیں،اپنے موقف پرقائم ہیں،دنیابھرمیں ریاست کی بقاکادارومداراقتصادی اورمعاشی قوت پرہوتاہے،نوازحکومت نےسالانہ معاشی ترقی کاتخمینہ ساڑھے6فیصدلگایاتھا،یہ ممکن نہیں کہ ہم اس حکومت کوتسلیم کرلیں،جب معیشت تباہ ہوتی ہےتوملک تباہ ہوجاتےہیں۔فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ عزت نفس کو قربان کرکےہم نےزندگی گزارنانہیں سیکھا،ایک کروڑنوکریاں دینےکاخواب 26لاکھ نوجوانوں کی بیروزگاری پرختم ہوا،ان کوبےگھرکرناآتاہے،گھردینانہیں آتا،ان کوبیروزگارکرناآتاہےروزگاردینانہیں آتا،حکومت نےعام افرادکی قوت خریدختم کردی ہے،دنیامیں انقلاب دولت مندنہیں لائے،انقلاب غریب لاتےہیں،انقلاب آکررہیگا،یقین دلایاکہ مودی آئیگاتوکشمیرکامسئلہ حل کریگا،مودی آیااورکشمیرکاسوداہوگیا،کیاعمران خان نےکشمیرکوتقسیم کرنےکافارمولاپیش نہیں کیاتھا؟وزیر اعظم آزادکشمیرپرغداری کےمقدمے سےبھارت خوش ہوا،اٹھارویں ترمیم پاس کرکےہم نےکسی حدتک صوبوں کوخودمختاری دی تھی، سندھ اوربلوچستان کےجزائرپرقبضہ اٹھارویں ترمیم اورآئین کےخلاف ہوگا،جزائرسندھ اوربلوچستان کےہیں ان پرسندھ اوربلوچستان کےعوام کاحق ہے۔

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ ایسی کوئی ترمیم قبول نہیں کی جائیگی جس سےلوگوں کےحقوق میں کمی آئے،اگرسندھ کےعوام نہیں چاہتےتوکسی کاباپ سندھ کوتقسیم کرنےکی جرات نہیں کرسکتا،آپ صوبوں کودیےہوئےاختیارات واپس چھین رہےہیں،موجودہ حکومت نےپاکستان کودنیا میں تنہا کردیاہے،سعودی عرب کےساتھ بھی آج پاکستان کےتعلقات مخدوش ہیں،چین نےپاکستان میں سرمایہ کاری،بجلی گھربنانےکیلئےفنڈدیےلیکن ترقی کےسفرکوحکومت نےروکا،چین بھی آج ہم پراعتمادکرنےکوتیارنہیں، ایران ہمسایہ ہےلیکن وہ بھی بھارت کےکیمپ میں بیٹھاہواہے،آج افغانستان کی کرنسی پاکستانی روپیہ سےزیادہ مستحکم ہے،یہ جنگ ہم جیت کررہیں گے،اپناحق حاصل کرکےرہیں گے،پاکستان اس صورت میں ترقی کرسکتاہےجب تمام ادارےاپنےدائرہ کارمیں رہیں،ملک کواناڑیوں کےحوالے کروگےتوملک کابیڑا غرق ہوگا۔ TAGS:

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں