69

کیپٹن (ر) صفدر کی گرفتاری کا معاملہ، سندھ پولیس کے اعلیٰ افسران میں شدید مایوسی ، استعفے دینے پر غور

کیپٹن (ر) صفدر کی گرفتاری کا معاملہ، سندھ پولیس میں پلچل مچ گئی

کراچی : (الشامی نیوز) مزار قائد کے تقدس کی پامالی کا کیس سندھ پولیس کے گلے پڑ گیا، آئی جی سندھ مشتاق مہر سمیت کئی اعلیٰ پولیس افسران ایک ساتھ چھٹیوں پر چلے گئے۔
تفصیلات کے مطابق کیپٹن صفدر کی گرفتاری کے لئے دباو پر سندھ پولیس کے اعلیٰ افسران نے چھٹی پر جانے کا فیصلہ کر لیا، آئی جی سندھ مشتاق مہر 15 روز کی چھٹی پر چلے گئے ، ذرائع کے مطابق آئی جی سندھ آج دفتر بھی نہیں آئے، ایڈیشنل آئی جی اسپیشل برانچ عمران یعقوب سمیت کراچی اور اندرون سندھ کے 9 ڈی آئی جیز نے چھٹی کی درخواستیں دیں۔ایڈیشنل آئی جی عمران یعقوب مہناس نےدرخواست میں تحفظات کااظہاربھی کیااور کہا گزشتہ روز کے واقعے کے بعد سندھ پولیس کے تمام افسران مایوسی کا شکارہیں، ایسے ماحول میں کام نہیں کرسکتا ۔ تمام افسران چھٹی کی درخواستیں ارسال کرکے دفاترسے روانہ ہوگئے، ڈی آئی جی ساؤتھ، ڈی آئی جی ایسٹ اورڈی آئی جی سی ٹی ڈی دفاتر سے روانہ ہوئے ، جبکہ ڈی آئی جی ہیڈ کوارٹرز بھی چھٹیوں پر چلے گئے چھٹی پر چلے گئے۔واضح رہے کہ گزشتہ روز مزار قائد تقدس پامالی کیس میں کراچی پولیس نے مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کے شوہر کیپٹن (ر) صفدر کو گرفتار کیا گیا تھا، پولیس حکام کے مطابق کیپٹن صفدر کے خلاف مقدمہ بریگیڈ تھانے میں درج ہے اور انہیں گرفتار کرکے تھانہ عزیز بھٹی میں رکھا گیا ہے ، بتایا گیا کہ محمد صفدر کو مزار قائد پر نعرے لگانے پر مزار قائد ایکٹ کی خلاف ورزی پر گرفتار کیا گیا ہے اور مقدمے میں کیپٹن (ر) صفدر، مریم صفدر سمیت 200 لیگی کارکنان نامزد ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں