105

کراچی میں بارش سے بجلی کی تنصیبات کو نقصان، ترسیل معطل

کراچی::(الشامی نیوز /آن لائن نیوز ) میں بجلی فراہم کرنے کی ذمہ دار کمپنی کے الیکٹرک کا کہنا ہے کہ حالیہ طوفانی بارش سے بجلی کی تنصیبات کو نقصان پہنچا جس سے بیشتر علاقوں میں ترسیل معطل ہے۔

چیف ڈسٹری بیوشن آفیسر(سی ڈی او) کے الیکٹرک کے مطابق نکاسی آب نہ ہونے سے مختلف گرڈ اسٹیشنز میں بھی پانی بھر گیا۔ پانی کھڑا ہونے سے چند علاقوں میں بجلی کی فراہمی متاثر ہے۔

کلفٹن اور ڈیفنس سمیت متعدد علاقوں میں کئی فٹ پانی موجود ہے اور پانی کھڑا ہونے کے باعث گاڑیاں متعلقہ جگہوں پر پہنچنے سے قاصر ہیں۔

سی ڈی او کے مطابق چند نشیبی علاقوں میں احتیاطی تدابیر کے تحت بجلی بند کر دی گئی ہے اور عوام بجلی سے متعلق ایمرجنسی صورت حال کی اطلاع کے لیے118پر رابطہ کریں۔

کراچی کے بیشتر رہائشی علاقوں میں بجلی کی ترسیل بحال نہیں ہو سکی۔  گلشن اقبال بلاک 1 اور 4 میں 12 گھنٹے سے بجلی کی فراہمی معطل ہے۔

بفرزون سیکٹر 14 اور 16 میں گزشتہ 16 گھنٹے سے بجلی کی فراہمی معطل ہے۔ گلستان جوہر، بن قاسم، فیڈرل بی ایریا میں بھی 12 گھنٹے سے بجلی بند ہے۔

ترجمان کے الیکٹرک کا کہنا ہے کہ بارش کے پانی نے بجلی کی متعدد تنصیبات کو متاثر کیا ہے۔ سرجانی ٹاؤن، گلستان جوہر اور بن قاسم میں پانی کی نکاسی تک بجلی بحال نہیں کی جاسکتی۔

امدادی ٹیموں کی متاثرہ علاقوں تک رسائی میں بھی مشکلات کا سامنا ہے تاہم  نارتھ ناظم آباد، ناظم آباد، نارتھ کراچی اور پاپوش نگر کے علاقوں میں بجلی بحال کردی گئی ہے۔

کے الیکٹرک کے مطابق بارشوں سے متاثرہ علاقوں میں بجلی بحالی کا کام جاری ہے اور کورنگی سیکٹر 10 بلاک اے، بی، ملت ٹاؤن، نارتھ ناظم آباد بلاک این میں بجلی کی فراہمی جاری ہے۔

نارتھ ناظم آباد ایم، لیاقت آبادنمبر4، ایف سی ایریا اور زینت اسکوائر میں بھی بجلی کی فراہمی جاری ہے۔ ایف بی ایریا بلاک 12، 13، 15، 16 اورگلشن اقبال بلاک 6، 7 میں بجلی بحال ہے۔

کے الیکٹرک حکام کا کہنا ہے کہ ناظم آباد نمبر 3، گلبہار اور یوسف گوٹھ میں بھی بجلی بحال ہے۔ پانی کی نکاسی نہ ہونے سے بجلی کی بحالی میں دشواری کا سامنا ہے۔ کھڑے پانی میں بجلی کی بحالی حادثات کا سبب بن سکتی ہے۔ سیلاب زدہ علاقوں میں احتیاطی طور پر بجلی بند کی گئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں