68

پاکستان پوسٹ کانجی بینک سے 118 ارب روپے کا خلاف قواعد معاہدہ کا انکشاف

اسلام آباد( الشامی نیوز )پبلک اکائونٹس کمیٹی میں انکشاف کیا گیا کہ پاکستان پوسٹ نے کابینہ سے منظوری لیے بغیر اور پیپر ا رولز کی خلاف ورزی کرتے ہوئے خلاف قواعد نجی بینک کیساتھ 118 ارب روپے کا پارٹنر شپ معاہدہ کرلیا، کمیٹی نے آڈیٹر جنرل آف پاکستان، سیکرٹری پاکستان پوسٹ کو سوالنامہ دیکر زمہ داروں کے تعین کی ہدایت کرتے ہوئے تفصیلی رپورٹ 15یوم میں طلب کر لی ہے،پی اے سی کا اجلاس چیئرمین رانا تنویر کی زیرصدارت ہوا ، سیکرٹری مواصلات نے بریفنگ دیتےہوئے بتایاکہ فنانشل ایکشن ٹاسک فورس نے گرے لسٹ سےنکلنے کیلئے چالیس سفارشات کی تھیں جن میں سے تیس کا تعلق پاکستان پوسٹ سے تھا،ہمارا سارا نظام مینوئل تھاہمیں آئی او تھری کے تحت مانیٹرنگ سسٹم اور ریگولیشن سسٹم بنانا تھااس مقصد کیلئے کمرشل بنک نے ہمیں آفر کی اور اسکا حل ہمیں نجی بینک دے رہا تھاتو اس کیساتھ معاہدہ کر لیا جس پر ایاز صادق نے انکشافات سے بھرپور رپورٹ کمیٹی ممبران کو پیش کردی، انہوں نے سیکرٹری مواصلات سےپوچھا بتایاجائے کہ جس معاہدہ کی منظوری

وزارت قانون سے لی گئی تھی اور جو معاہدہ بنک کیساتھ کیا گیا، کیا وہ ایک ہی تھا، سیکرٹری نے کہا کہ جو معاہدہ نجی بینک کیساتھ کیا گیا وہ معاہدہ وزارت وقانون سے منطور شدہ سے مختلف تھا، ایازصادق نے کہاکہ یہ کتنےکی سرمایہ کاری تھی جس پر سیکرٹری نےبتایاکہ یہ ایک سو پندرہ ارب روپےکی سرمایہ کاری تھی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں