52

وکلا نے قانون کی دھجیاں‌ بکھیر دی، شدید ہوائی فائرنگ

لاہور: (الشامی نیوز) پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں وکلا نے قانون کو پیروں تلے روند ڈالا۔

نمائندہ الشامی نیوز کے مطابق لاہوربار ایسوسی ایشن کے انتخابات ہوئے جس کے نتائج آنے پرکالے کوٹ والوں نے قانون کی دھجیاں اڑا دیں۔

کالے کوٹ زیب تن کیے وکلا نے ایوانِ عدل کے سامنے جدید اسلحے سے شدید ہوائی فائرنگ کی جس سے پورا علاوہ گولیوں کی تڑ تڑاہٹ سے گونج اٹھا جبکہ جشن منانے والوں نے کرونا ایس او پیز کا خیال بھی نہیں رکھا۔

واضح رہے کہ جدید اسلحے سے ہوائی فائرنگ کرنا جرم تصور کیا جاتا ہے، جس پر مقدمہ بھی درج ہوتا ہے اور ملزم کی گرفتاری بھی عمل میں لائی جاتی ہے، مگر یہ کوئی پہلی بار نہیں بلکہ اس سے قبل بھی وکلا مختلف اوقات میں قوانین کی خلاف ورزی کرچکے ہیں۔

یاد رہے کہ 2019 میں وکلا نے پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی دھاوا بولا تھا، جس کے دوران انہوں نے ہنگامہ آرائی اور اسپتال کے اندر توڑ پھوڑ کی تھی۔ وکلا کے ہنگامی کی وجہ سے تین مریضوں کو بروقت طبی امداد نہیں مل سکی تھی جس کے باعث وہ جاں بحق ہوگئے تھے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں