38

وزیراعظم آج دورہ پشاور میں مہمند ڈیم کےتعمیراتی کام کا جائزہ لیں گے

اسلام آباد : وزیر اعظم عمران خان آج پشاورکادورہ کررہے ہیں جہاں وہ مہمندڈیم کے تعمیراتی کام کاجائزہ لیں گے، اس موقع پر چیئرمین واپڈا لیفٹیننٹ جنرل (ر) مزمل حسین منصوبے پر پیشرفت کے حوالے سے وزیر اعظم کو بریفنگ دیں گے۔

تفصیلات کے  مطابق وزیر اعظم عمران خان نے مہمند ڈیم کا سنگ بنیاد 2مئی 2019 کو رکھا تھا ، مہمند ڈیم دریا سوات پر قبائلی ضلع مہمند میں تعمیر کیا جارہا ہے، یہ کثیر المقاصد منصوبہ سیلابی صورتحال کو کنڑول کرنے، زراعت اور شہری ضروریات کے لیے پانی ذخیرہ کرنے، سستی اور ماحول دوست بجلی پیدا کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے ۔ 309ارب  روپے سے زائد  لاگت سے بننے والے مہمند ڈیم کی اونچائی 213 میٹر ہوگی جس میں 1.293 میلین ایکڑ فٹ پانی ذخیرہ کرنے کی گنجائش ہوگی اور 800 میگاواٹ بجلی پیدا ہوگی۔ بجلی، آبپاشی اور سیلاب سے بچاو کے ضمن میں پاکستان کو مہمند ڈیم کی تکمیل کے بعد سالانہ 51 ارب روپے کا فائدہ حاصل ہوگا۔

وزیر اعظم عمران خان کی خصوصی دلچسپی اور ہدایات کے مطابق اس منصوبے پر کام تیزی سے جاری ہے جو کورونا وباء کے باوجود بھی تعطل یا تاخیر کا شکار نہیں ہوا،  واپڈا اس منصوبے کو اپنی مقررہ مدت سال 2025 تک پایہ تکمیل کو پہنچانے کے لیے پر عزم ہے۔

وزیر اعظم عمران خان پشاور میں نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام کے تحت شاہی بالا، ریگی للمہ پشاور میں کم لاگت فیملی فلیٹس کی مزدوروں میں تقسیم کی تقریب میں بطور مہمان خصوصی شرکت کریں گے۔ یہ منصوبہ خیبر پختونخوا حکومت کے زیر انتظام ہے جس میں 2056 فیملی فلیٹس مالکانہ حقوق کی بنیاد پر صوبے کے رجسٹرڈ ورکرز میں تقسیم کئے جائیں گے۔ فلیٹس کی فراہمی کاعمل بھی آج سے شروع ہوگا۔فلیٹ کی قیمت چھبیس لاکھ روپے مقرر کی گئی ہے جس میں سے تین لاکھ روپے حکومت ادا کریگی جبکہ باقی ماندہ قیمت کی ادائیگی اقساط میں ہوگی۔ تقسیم کا طریقہ کار قرعہ اندازی کے ذریعے ہوگا جس میں 3 فیصد بیواؤں اور 2 فیصد معذور افراد کے لیے کوٹہ مختص کیا گیا ہے۔ اس منصوبے میں 30 کلاس رومز پر مشتمل اسکول بھی شامل ہے۔ وزیر اعظم اس موقع پر خطاب بھی کریں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں