44

سرگنگا رام کی پڑپوتی کیشارام امریکی سینیٹر منتخب

ویب ڈیسک : معمار لاہور کے نام سے شہرت رکھنے والے سرگنگارام کی پڑپوتی مس کیشا رام نے اہم اعزاز اپنے نام کرلیا ۔
تفصیلات کے مطابق رائے بہادر سر گنگا رام  کی  پڑپوتی مس کیشا رام امریکی سیاستدان ہیں جو حال ہی میں امریکی ریاست ورماؤنٹ سے سٹیٹ سینیٹر منتخب ہوئی ہیں ۔34 سالہ کیشا رام نے 6 جنوری کو حلف اٹھا یا تھا اورحلف برداری کی تقریب میں وہ  سفید شلوار قمیص میں ملبوس تھیں ۔مس کیشا رام 2 اگست 1986 کو کیلفورنیا میں پیدا ہوئیں ، کیشا  نے  22 سال کی عمر سے  برلنٹن یونیورسٹی ڈسٹرکٹ اور ہل سیکشن کے نمائندے کی حیثیت سے آٹھ سال تک خدمات انجام دی ہیں۔ انہوں نے یونیورسٹی آف ورماونٹ (UVM) سے قدرتی وسائل اور سیاسیات میں  گریجویشن کیا ہے جبکہ وہ  ایوان میں پہلی  رکن تھیں جنہوں  نے ماحولیاتی انصاف کا پہلا بل بھی پیش کیا ۔ 2009 سے 2016 تک امریکی ریاست  ورماونٹ کے ایوان نمائند گان  میں خدمات انجام دیتی رہی ہیں ۔ وہ ایوان نمائندگان کی سب سے کم عمر  قانون ساز رکن کی حیثیت سے کام کررہی   ہیں ۔ پیشے کے لحاظ سے مس کیشا  رام خو اتین  پر گھریلو تشدد  کے خاتمے  سے متعلقہ ایک ادارے میں  قانونی ڈائریکٹر بھی ہیں ۔مس کیشا رائے بہادر سر گنگا رام کی عظیم پوتی ہیں ، جو ایک ہندوستانی سول انجینئر ، معمار ، اور مخیر طبقہ سے تعلق رکھتے  تھے۔ جدید پاکستان میں  لاہور شہر میں وسیع تر شراکت کے پیش نظر انہیں جدید لاہور کا باپ بھی قرار دیا گیا ۔  شہر لاہور پر ان کے بے شمار احسانات ہیں۔ لاہور میں عجائب گھر، جنرل پوسٹ آفس، ایچی سی کالج، میواسکول آف آرٹس، میو ہسپتال کا سر البرٹ وکٹر ہال اور گورنمنٹ کالج یونیورسٹی کا کیمسٹری ڈیپارٹمنٹ ان کے ڈیزائن کردہ ہیں۔ سر گنگا رام کو تقسیم ہند سے قبل ہندوستان اور پاکستان دونوں میں صحت کے بنیادی  انفراسٹکچر  کے  نیٹ ورک بنانے کے لئے بھی جانا جاتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں