86

درہ آدم خیل میں اجتماعی قبر سے 16 لاشیں برآمد، شناخت کا عمل جاری

درہ آدم خیل: (الشامی نیوز) خیبر پختونخوا کے علاقے درہ آدم خیل میں ایک اجتماعی قبر سے 16 افراد کی لاشیں برآمد ہوئی ہیں۔ لاشوں کو ہسپتال منتقل کرکے شناخت کا عمل شروع کر دیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق اجتماعی قبر سے لاشوں کی برآمدگی کے بعد متعلقہ اداروں نے تحقیقات بھی شروع کر دی ہیں۔ تمام افراد کی نماز جنازہ شانگلہ میں ادا کی جائے گی۔

پولیس ذرائع کے مطابق ان تمام افراد کا تعلق خیبر پختونخوا کے علاقے شانگلہ سے ہے۔ متعلقہ افراد کو 2011ء میں شدت پسندوں نے خیبر ایجنسی کے علاوق تورچھپر سے اغوا کیا گیا تھا۔ قتل کئے گئے یہ تمام افراد کان کن تھے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ 2011ء میں درہ آدم خیل میں طالبان سرگرم تھے۔ مغویوں کے لواحقین گزشتہ دس سالوں سے اپنے پیاروں کی تلاش میں تھے۔ گزشتہ روز مقامی لوگوں کو کچھ باقیات ملی تھیں۔

بیان میں کہا گیا ہے کہ باقیات ملنے پر پولیس اور ریسکیو کے اداروں کو مطلع کیا گیا تھا۔ جائے وقوعہ سے سولہ افراد کی باقیات ملی ہیں، مزید باقیات کیلئے کھدائی جاری ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں