56

بلوچستان میں دہشت گردی کے پیچھے بھارت ملوث ہے، وزیراعظم

کوئٹہ: (الشامی نیوز) وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ بلوچستان میں دہشت گردی کے پیچھے بھارت ملوث ہے، ہزارہ برادری کی سیکیورٹی کے لیے بھرپور اقدامات کررہے ہیں۔

الشامی نیوز کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے ڈیجیٹل میڈیا نمائندگان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہزارہ کمیونٹی کی شیعہ برادری کا قتل افسوسناک ہے، ہزارہ برادری کے ساتھ ہونے والے ظلم پر بہت دکھ اور افسوس ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ شیعہ ہزارہ کمیونٹی کی نسل کشی کی جارہی ہے،کچھ دہشتگرد گروہوں اور داعش کااتحاد ہوچکا ہے، داعش کو بھارت کی سپورٹ حاصل ہے۔

انہوں نے کہا کہ افغان جہاد ختم ہونے کے بعد عسکری گروہ باقی رہ گئے،افغان جہاد ختم کےبعدعسکری گروہوں نےپاکستان کوبہت نقصان پہنچایا،مارچ میں ہی کابینہ کو بھارت کی فرقہ وارانہ تصادم کی کوششوں سےآگاہ کردیاتھا۔

عمران خان نے کہا کہ بھارت نے پاکستان میں شیعہ سنی فسادات کرانے کی کوشش کی،کراچی میں مولانا عادل کاقتل فرقہ وارانہ تصادم کوہوا دینےکی کوشش تھی، ہمارے اداروں نے مسلکی تصادم کو روکنے کے لیے بہترین کام کیا۔

وزیراعظم نے کہا کہ ہماری ایجنسیز نے بھارتی عزائم کو ناکام بنایا، خفیہ ادارے اور فوج بہترین ادارے ہیں،سیکیورٹی اداروں نےکئی گروہوں کودہشتگردی سےپہلے ہی گرفتار کیا، سیکیورٹی فورسز مسلسل اقدامات کررہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کم آبادی اورووٹوں کی وجہ سےماضی کی حکومتوں نےبلوچستان پرتوجہ نہ دی، ہماری حکومت بلوچستان کی ترقی پر خصوصی توجہ دے رہی ہے،پیپلزپارٹی نے کراچی اورماضی کی وفاقی حکومتوں نےبلوچستان کو نظراندازکیا، بلوچستان کی تباہی میں وہاں کے سرداری سسٹم کابھی کردارہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ ماضی میں ترقیاتی فنڈز سرداروں کے ذریعے دیےجاتے تھے،سردار امیر ہوگئےجبکہ بلوچستان کے عوام غریب رہ گئے،جام کمال اچھے وزیراعلیٰ ہیں، ان کےساتھ مل کربھرپورکام کررہےہیں۔جب اخلاقی گراوٹ ہو تو ملک تباہ ہوجاتے ہیں، دو جماعتوں نے ملک و قوم کی اخلاقی اقدار کو تباہ کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں