50

بابراعظم سے متعلق خاتون حامیزہ مختار کے الزامات بے بنیاد اور جھوٹے ہیں پولیس نے الزامات کی تحقیقات کرنے کے بعد رپورٹ عدالت میں پیش

لاہور (الشامی نیوز) کپتان کرکٹ ٹیم بابر اعظم پر لگائے گئے خاتون کے الزام بے بنیاد قرار، پولیس نے رپورٹ عدالت جمع کرادی

قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان بابراعظم سے متعلق خاتون حامیزہ مختار کے الزامات بے بنیاد اور جھوٹے ہیں پولیس نے الزامات کی تحقیقات کرنے کے بعد رپورٹ لاہور کی سیشن عدالت میں جمع کرا دی۔

پولیس نے عدالت کو بتایا کہ 2017 میں بھی خاتون کا موقف سن کر اندراج مقدمہ کی درخواست داخل دفتر کر دی گئی تھی کیونکہ خاتون حامیزہ مختار کے بابر اعظم سے متعلق الزامات میں کوئی سچائی نہیں۔

پولیس نے اپنی رپورٹ میں عدالت کو بتایا کہ خاتون پولیس کے سامنے ٹھوس شواہد پیش نہیں کر سکی۔ جس پر عدالت نے حکم دیا کہ پھر بھی درخواست کو قانون کے مطابق نمٹایا جائے۔

یاد رہے کہ خاتون حامیزہ مختار نے بابر اعظم پر شادی کا جھانسہ دے کر زیادتی، مارپیٹ، دھمکیوں، اسقاط حمل کرانے جیسے سنگین الزامات لگائے تھے۔

کچھ روز قبل حامیزہ مختار نے بابراعظم پر الزامات عائد کرتے ہوئے کہا تھا کہ بابراعظم مجھے کورٹ میرج کے بہانے گھر سے بھگا کر لے گیا تھا اور مختلف جگہوں پر کرائے کے مکانوں پر رکھتا رہا، حامیزہ نامی لڑکی نے دعویٰ کیا کہ میرے ساتھ زیادتی کرنے والا کوئی عام شخص نہیں بلکہ بابراعظم ہے جو اس وقت پاکستانی ٹیم کا کپتان ہے۔

حامیزہ مختار کا مزید کہنا تھا کہ بابراعظم سے میرا تعلق اس وقت کا ہے جب بابر نے ابھی کرکٹ کی دنیا میں قدم بھی نہیں رکھا تھا اور وہ ایک غریب گھرانے سے تعلق رکھتا تھا اور مجھ سے پیسے لیا کرتا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں