56

اس جعلی شخص کو وزیراعظم نہیں مانتی، اس حکومت کو تسلیم نہیں کرتی ، مریم نواز

کراچی ( الشامی نیوز )عمران خان کا نام بھی لینا پسند نہیں کرتی، میں اس جعلی شخص کو وزیراعظم نہیں مانتی، اس حکومت کو تسلیم نہیں کرتی اور اس کے الزامات کا جواب دینا پسند نہیں کرتی

تفصیل کے مطابق کراچی میں پی ڈی ایم کے دوسرے جلے سے طوفانی خطاب کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز نے کہا کہ کل ایک شخص چیخ چیخ کر اپنی ناکامی کا ماتم کررہا تھا، ابھی تو ایک ہی جلسہ ہوا ہے اور وہ کہتے ہیں کہ گھبرانا نہیں، ایک ہی جلسے میں وہ شخص دماغی توازن کھو بیٹھا، جعلی اور سلیکٹڈ ہی صحیح اگر آپ وزیراعظم کے عہدے پر بیٹھے ہیں اور مانا آپ پر بہت دباؤ ہے پھر بھی وزیراعظم کی کرسی کی لاج ہی رکھ لیتے، تقریر کے ایک ایک لفظ اور حرکات و سکنات سے آپ کا خوف جھلک رہا تھا اور یہی خوف پاکستانی کے عوام آپ کے چہرے پر دیکھنا چاہتے ہیں، یہ خوف عوام کی طاقت کا ہے۔مریم نواز نے کہا کہ عمران خان دباؤ میں رہنے کے باوجود کام کرنا نواز شریف سے سیکھیں جب آپ 126 دن دھرنے میں بیٹھے رہے تب بھی نواز شریف بوکھلائے نہیں اور کوئی الٹے سیدھے بیانات نہیں دیے، عمران خان کو نواز شریف کے منہ سے اپنا نام سننے کی خواہش ہی رہ جائے گی اس لیے کہ بڑوں کی لڑائی میں بچوں کا کوئی کام نہیں، تم کس خوشی میں اچھل رہے ہو، تم پہلے تابعدار ملازم تھے اب وزیراعظم کی کرسی پر آنے کے بعد وزیراعظم کی تنخواہ لے رہے ہو۔مسلم لیگ ن کی نائب صدر نے کہا کہ میں عمران خان کا نام بھی لینا پسند نہیں کرتی، میں اس جعلی شخص کو وزیراعظم نہیں مانتی، اس حکومت کو تسلیم نہیں کرتی اور اس کے الزامات کا جواب دینا پسند نہیں کرتی، مجھے کہا کہ یہ بچی ہے لیکن نانی ہے، میں ایک نہیں دو بچوں کی نانی ہوں، آپ میری نہیں نانی کے مقدس رشتے کی توہین کررہے ہیں وہ ماں کی بھی ماں ہوتی ہے، میں اگر آپ کو نشانہ بنانا چاہوں تو میرے پاس باتیں ہیں لیکن مجھے یہ زیب نہیں دیتا کہ ایسی باتیں زبان پر لاؤں، یہ رشتے ان لوگوں کو ملتے ہیں جو ان رشتوں کی عزت اور قدر جانتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ میں اور بلاول اس طرح سے بہن بھائی ہیں جس طرح بے نظیر بھٹو اور نواز شریف بہن بھائی کی طرح قریب آگئے تھے، بلاول وعدہ کریں کہ ہم انتخابی میدان میں حریف بنیں گے تو ایک دوسرے سے ذاتی عناد نہیں رکھیں گے۔

مریم نواز نے کہا کہ اگر تم نواز شریف کی تقریر پر پابندی لگاتے ہو اور اسے نشر ہونے سے روکتے ہو تو اس پر تبصرہ کرنے کا بھی کوئی حق نہیں، کل تقریر میں عمران خان نے سچ کہہ دیا کہ نیب ہمارے ساتھ ہے، کون نہیں جانتا ہے کہ نیب عمران خان کے اشارے پر کام کرتا ہے، دنیا جانتی ہے کہ ایف آئی اے اور ایف بی آر سمیت تمام ادارے حکومت کے اشارے پر کام کرتے ہیں۔پرورش میں جائز کمائی نہ ہونے کے الزام پر مریم نواز نے کہا کہ عمران خان بتائیں کہ سلیکٹر کی اس نوکری کے سوا آپ نے کوئی نوکری کی؟ تو پھر یہ شاہ خرچیاں کہاں سے پوری ہورہی ہیں؟ دوسرے پر الزام لگانے سے پہلے اس کا تو جواب دیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں