45

اسلام آباد میں بیٹھی حکومت چند ماہ کی مہمان ہے، یہ صرف اقتدار اور حکومت بنانے کی لڑائی نہیں ہے، بلاول بھٹو زرداری

گھرمنگ (الشامی نیوز) میں نہیں چاہتا کہ گلگت بلتستان کےعوام کا مستقبل تباہ ہو، اسلام آباد میں بیٹھی حکومت چند ماہ کی مہمان ہے، یہ صرف اقتدار اور حکومت بنانے کی لڑائی نہیں ہے،یہ گلگت کےمستقبل کا سوال ہے،

تفصیلات کے مطابق چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو کا گلگت بلتستان کے ضلع گھرمنگ میں انتخابی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ جس جوش اورمحبت کیساتھ آپ لوگوں نے استقبال کیا میں زندگی بھر نہیں بھولوں گا، ملک کی جمہوری جدو جہد میں کھر منگ کےنوجوانوں کاخون شامل ہے۔ پیپلزپارٹی نے یہاں کے عوام کو ووٹ ڈالنے کا اختیار دیا، پیپلزپارٹی نے یہاں سے ایف سی آر کا خاتمہ کیا، پیپلزپارٹی نے گلگت بلتستان کو اپنی شناخت دلوائی اور ہم گلگت بلتستان کو جمہوری ، آئینی اور انسانی حقوق دلائیں گے۔بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ ہم یہاں کے عوام کے حقوق کیلیے جدوجہد کرتے رہےہیں، پیپلزپارٹی کامنشور گلگت بلتستان کے عوام کامطالبہ ہے اور گلگت بلتستان کے عوام کا مطالبہ ہے کہ ان کو حقوق دو ان کا کہنا تھا کہ  یہ صرف ایک الیکشن نہیں گلگت بلتستان کا مستقبل ہے، پورے ملک میں آٹے کا بحران ہے، ہم نے آپ کو پی ٹی آئی کی تباہی سےبچانا ہے۔چیئرمین پیپلز پارٹی کا کہنا تھا کہ شہید ذوالفقار بھٹونےپورے ملک میں صنعتیں بنائیں، ہمیں معاشی بحران،منہگائی اورغربت کے خاتمے کیلئے عوامی حل چاہیے، ہم نےاپنےدورحکومت میں مشکل وقت میں بھی لاوارث نہیں چھوڑاتھا، ہم نےپنشن میں 150فیصد اضافہ کیا، ہم نے منہگائی کا مقابلہ کرنےکیلئےتنخواہوں میں اضافہ کیا۔بلاول بھٹو نے کہاکہ میں نہیں چاہتا کہ گلگت بلتستان کےعوام کا مستقبل تباہ ہو، اسلام آباد میں بیٹھی حکومت چند ماہ کی مہمان ہے، یہ صرف اقتدار اور حکومت بنانے کی لڑائی نہیں ہے،یہ گلگت کےمستقبل کا سوال ہے، پیپلز پارٹی ہی واحد جماعت ہے جو آپ کے مسائل کا حل نکال سکتی ہے میں  امید کرتا ہوں کہ گلگت بلتستان کےعوام الیکشن میں صحیح فیصلہ لیں گے، ہم چاہتےہیں گلگت کےہر ضلعےمیں یونیورسٹی کاکیپمس ہو تاکہ غریب کا بچہ بھی تعلیم حاصل کرسکے۔چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو کا مزید کہنا تھا کہ میں گلگت بلتستان میں بھی صحت کے مفت ادارےکھڑےکرناچاہتاہوں، گلگت کےمزدوروں کےلیےبھی بینظیرمزدورکارڈ متعارف کراؤں گا، آج کل ہم پورے ملک میں پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کی تحریک چلا رہے ہیں، جس طرح آپ نے ایم آر ڈی اور اے آر ڈی میں ساتھ دیا،پی ڈیم ایم کا بھی ساتھ دیں گے۔

واضح رہے کہ گلگت بلتستان اسمبلی کی 24 عام نشستوں میں سے 23 نشستوں کیلئے پولنگ 15 نومبر کو ہوگی۔ انتخابی دنگل کیلئے پی پی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری 3ہفتوں کیلئےگلگت بلتستان کے 23 انتخابی حلقوں میں خود پیپلز پارٹی کے امیدوار کی کامیابی کیلئے مہم  چلارہے ہیں۔ 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں