73

کرونا وائرس کی وجہ سے دانتوں کو بھی نقصان

اسلام آباد :(الشامی نیوز ) دنیابھر میں کرونا وائرس کے مختلف طبی اثرات سامنے آرہے ہیں اور حال ہی میں ایک اور نقصان نے ماہرین کو تشویش میں مبتلا کردیا ہے، ماہرین کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے دوران دانتوں کے امراض میں بھی اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے۔

امریکن ڈینٹل ایسوسی ایشن کے ایک پروفیسر کے مطابق کرونا وائرس کی وجہ سے دانتوں کی نگہداشت میں تعطل اور تناؤ کے تیجے میں کچھ ڈینٹسٹ کو دانتوں میں کریک، جبڑوں کی سوجن اور کیوٹیز کے کیسز میں اضافہ نظر آرہا ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ گزشتہ چند ماہ کے دوران دانتوں میں مسائل کے شکار مریضوں کی تعداد بڑھی ہے جبکہ ایسے مریضوں کی بھی کمی نہیں جن کو جبڑوں کی سوجن کا سامنا ھے۔

ایک ماہر دندان کے مطابق دانتوں کے فریکچر کی شرح گزشتہ 6 برسوں سے بھی زیادہ ہے۔ گھروں میں زیادہ وقت گزارنے کے دوران زیادہ میٹھی اشیا کا استعمال ہورہا ہے اور اکثر افراد دانت صاف کرنے بھول جاتے ہیں جس سے دانتوں کے مسائل میں اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے۔

ایک رپورٹ کے مطابق یکم جولائی سے ستمبر کے وسط میں دانتوں کے کریک بھروانے والوں کی شرح 120 فیصد تک بڑھ گئی جبکہ ماؤتھ گارڈز کی فروخت میں بھی گزشتہ سال کے مقابلے میں اس برس 15 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا۔

امریکن ڈینٹل ایسوسی ایشن اور سی ڈی سی نے کرونا وائرس کے پھیلاؤ کے دوران ڈینٹسٹس کے پروٹوکول بھی تیار کیے ہیں۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں