150

انڈے کھانے کے پانچ فائدے

انڈوں کے بارے میں اکثر اوقات کہا جاتا ہے کہ ان میں کولیسٹرول کی مقدار زیادہ ہوتی ہے لیکن حقیقت یہ ہے کہ قدرتی غذاؤں میں غذائیت کے لحاظ سے انڈوں کا کوئی ثانی نہیں ہے۔
آپ انہیں اُبال کر کھائیں، آملیٹ بنائیں، فرائی کریں یا پھر کسی بھی طریقے سے کھائیں یہ آپ کے جسم کے لیے پروٹین، وٹامن اور منرلز پہنچانے کا بہترین ذریعہ ہیں اور آپ کی جیب پر بھی بھاری نہیں پڑتے۔
ہائی کوالٹی پروٹین
پروٹین مختلف امینو ایسڈز سے بنتا ہے اور اس کی نو اقسام انڈوں سے حاصل ہوتی ہیں۔ اسی لیے ان کو ہائی کوالٹی پروٹین کا ذریعہ سمجھا جاتا ہے۔ ایک بڑے انڈے میں چھ گرام پروٹین ہوتا ہے۔
وزن کم کرنے میں مددگار
انڈوں میں 77 کیلوریز ہوتی ہیں اور کاربوہائیڈریٹس بالکل نہیں ہوتے اس لیے انہیں ایسی خوراک میں شامل کیا جاتا ہے جسے کھا کر آپ کا بھوک احساس کم ہو جاتا ہے یعنی انہیں کھانے سے آپ کو معدہ بھرا ہوا محسوس ہوتا ہے۔
تحقیق میں سامنے آیا ہے کہ ناشتے میں انڈے کھانے سے زیادہ بھوک نہیں لگتی اور اس طرح آپ باقی دن میں کم کیلوریز کھاتے ہیں۔
ایک تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ جن افراد نے جتنی کیلوریز بیگلز سے حاصل کیں، اتنی ہی مقدار میں انڈے کھائے ان کا وزن 65 فیصد کم ہوا اور کمر کا سائز 34 فیصد کم ہوا۔
انڈوں اور دل کی بیماریوں کا آپس میں کوئی تعلق نہیں ہے (فوٹو: پیکسلز)
متوازن کولیسٹرول
انڈے میں 162 ملی گرام کولیسٹرول پایا جاتا ہے اور ماضی میں ان سے اجتناب کیا جاتا تھا تاہم حالیہ تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ انڈوں اور دل کی بیماریوں کا آپس میں کوئی تعلق نہیں ہے۔
اچھا کولیسٹرول ہمارے جسم کے لیے ضروری ہے اور انڈے اسے متوازن رکھتے ہیں۔ حقیقت میں انڈے کھانے سے جسم میں اچھے ہائی ڈینسٹی لائپو پروٹین (ایچ ڈی ایل) کولیسڑول کا اضافہ ہوتا ہے اور برے لو ڈینسٹی لائپو پروٹین (ایل ڈی ایل) کولیسٹرول کی کمی ہوتی ہے۔
قوت مدافعت میں بہتری
انڈے پروٹین، وٹامن ڈی، وٹامن بی 2، بی 5، بی 12، وٹامن ای، فولیٹ، لیوٹین اور اومیگا تھری سے بھرپور ہوتے ہیں۔ یہ تمام چیزیں قوت مدافعت کو بڑھاتی ہیں جبکہ وائرس اور بیکٹیریا کے پھیلاؤ کو کم کرتی ہیں۔
انڈے خاص طور پر سیلینیم سے بھرپور ہوتے ہیں جس سے قوت مدافعت بڑھتی ہے، ڈی این اے کو کم نقصان ہوتا ہے اور کینسر کے خلیے تباہ ہوتے ہیں۔
لیوٹین اور زیسانتھین نام کے اینٹی آکسیڈینٹس آنکھوں کی حفاظت کرتے ہیں (فوٹو: فری پک)
بینائی کے لیے سود مند
انڈے ان لوگوں کے لیے اومیگا تھری فیٹی ایسڈز حاصل کرنے کا ذریعہ ہیں جو مچھلی نہیں کھاتے۔ اومیگا تھری دماغ اور بینائی کے لیے مفید ہے۔
انڈوں کی زردی میں لیوٹین اور زیسانتھین نام کے اینٹی آکسیڈینٹس ہوتے ہیں جو آنکھوں کی حفاظت کرتے ہیں۔
کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں